لبنانی عالم دین نے مسجد کو عسکری تربیت گاہ بنا دیا

لبنانی عالم دین نے مسجد کو عسکری تربیت گاہ بنا دیا

  

        بیر وت (آن لائن)لبنان کے شعلہ بیان عالم دین شیخ احمد الاسیر نے جنوبی شہر صیدا میں واقع اپنی مسجد کو فوجی تربیت گاہ بنا دیا ہے اوراس مسجد میں ان کے حامیوں نے شیعہ ملیشیا حزب اللہ اور لبنانی فوج کے ساتھ حالیہ جھڑپوں کے بعد ہلکے ہتھیار منتقل کردیے ہیں۔العربی ٹی وی سے نشر ہونےوالی فوٹیج کے مطابق شیخ احمد الاسیر کے حامیوں نے عبرا کے علاقے میں واقع مسجد بلال بن رباح کو ہتھیاروں اور اسلحے کا ڈپو بنا رکھا تھا۔تاہم گذشتہ روز خونریز جھڑپوں کے بعد سے شیخ الاسیر کے اتا پتا کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہے۔

ایک فوجی ذریعے نے بتایا ہے کہ اس علاقے میں لڑائی فوج کے کنٹرول اور عالم دین کے فرار کے بعد ختم ہوئی ہے۔فوج نے کارروائی کے بعد سنی عالم دین کے کم سے کم ایک سو دس حامیوں کو گرفتار کر لیا ہے۔واضح رہے کہ شیخ احمد الاسیر شامی صدر بشارالاسد کے خلاف برسرپیکار اہل سنت جنگجوو¿ں کے حامی ہیں اور انھوں نے ماضی میں اپنے حامیوں سے کہا تھا کہ وہ شام میں باغی جنگجوو¿ں کے ساتھ مل کر اسدی فوج کے خلاف لڑائی میں شریک ہوں۔وہ حزب اللہ کے خلاف ماضی قریب میں سخت بیانات جاری کرتے رہے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -