مغربی کنارا ¾ یہودی بستی کی توسیع کے لیے فلسطینی اراضی میں کھدائی

مغربی کنارا ¾ یہودی بستی کی توسیع کے لیے فلسطینی اراضی میں کھدائی

  

                   الخلیل(پی پی سی )فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیل کا یہودی بستیوں کی تعمیرو توسیع کے شرمناک منصوبے پرعمل درآمد جاری ہے۔ اطلاعات کے مطابق منگل کے روز مغربی کنارے کے تاریخی شہر الخلیل کے جنوب میں "نیگوہوٹ" نامی یہودی کالونی کی توسیع کے لیے صہیونی فوج اور انتظامیہ نے بلڈوزروں کی مدد سے فلسطینیوں کی اراضی کی کھدائی شروع کر دی ہے۔عینی شاہدین نے مرکزاطلاعات فلسطین کو بتایا کہ صہیونی فوج نے یہودی کالونی"نیگوہوٹ" کے سامنے کے علاقے میں فلسطینی شہریوں کی ملکیتی اراضی میں کھدائیاں شروع کی ہیں۔ ان کھدائیوں کا مقصد اسی کالونی کو مزید وسعت دیتے ہوئے یہودی آباد کاری کا نیا سلسلہ شروع کرنا ہے۔عینی شاہدین کا مزید کہنا ہے کہ صہیونی فوج نے یہ اراضی کئی ماہ قبل فلسطینیوں سے چھین لی تھی۔

 اراضی غصب کرنے کے بعد ان کے مالکان اور دیگر مقامی فلسطینیوں کواراضی میں داخلے سے سختی سے منع کردیا گیا تھا۔ مقامی شہریوں کا کہنا ہے کہ اسرائیل نے کچھ عرصہ قبل مغربی کنارے میں مزید 800 مکانات کی تعمیر کا جو اعلان کیا تھا، اس میں اس کالونی میں مکانات کی تعمیر بھی شامل ہے۔ اس منصوبے پر اب عمل درآمد کا آغاز کردیا گیا ہے۔

مزید :

عالمی منظر -