سی پی آئی ایم کا کشمیر بارے میں مذاکراتی عمل کی بحالی پر زور

سی پی آئی ایم کا کشمیر بارے میں مذاکراتی عمل کی بحالی پر زور

  

               سرینگر (اے پی پی) کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسسٹ نے بھارتی وزیر اعظم منموہن سنگھ کے مقبوضہ کشمیر کے حالیہ دورے کے تناظر میں مقبوضہ علاقے کی موجودہ صورتحال پر شدید تشویش ظاہر کی ہے ۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پارٹی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ اب کشمیریوں کی آنکھیں کھل چکی ہیںاور انہیں مجموعی سماجی اقتصادی صورتحال میں بہتری اور امن عمل میں بہتری کی کوئی خاص توقع نہیں ہے۔

انہوں نے کہامحمد افضل گورو کی پھانسی اوربعض دیگر ناخوشگوار واقعات سیاسی عمل اور مفاہمت کو شدید دھچکا پہنچاہے۔ بیان میں کہا گیا کہ کشمیریوں کو درپیش مشکلات کو کم کرنے اور خطے میں امن اور ترقی و خوشحالی کا نیا دور شروع کرنے کیلئے تعطل کے شکار پاک بھارت مذاکراتی عمل کو ترجیح دی جائے چاہیے۔ پارٹی نے کہاکہ مقبوضہ علاقے میں رائج کالے قوانین آرمڈ فورسزسپیشل پاورز ایکٹ اور پبلک سیفٹی ایکٹ کے ذریعے کشمیری نوجوانوںکو مسلسل نشانہ بنایا جارہا ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ فوری انصاف کی فراہمی کیلئے مقبوضہ علاقے سے باہر جیلوں میں نظربند کشمیریوں کے مقدمات تیزی سے نمٹایا جانا چاہیے ۔

مزید :

عالمی منظر -