طویل لوڈ شیڈنگ پر سنٹرل جیل فیصل آباد میں ہنگامہ آرائی کا خدشہ

طویل لوڈ شیڈنگ پر سنٹرل جیل فیصل آباد میں ہنگامہ آرائی کا خدشہ

  

        فیصل آباد (بیورو رپورٹ) شہر کے دیگر حصوں کی طرح فیصل آباد سنٹرل جیل میں بھی شدید گرمی اور ناقابل برداشت حبس کی فضاءمیں 12/10گھنٹے کی بجلی کی لوڈشیڈنگ نے گنجائش سے دوگنا موجود قیدیوں کو پریشانی اور اذیت میں مبتلا کردیاہے۔ جس سے نہ صرف قیدیوں کے بیمار ہونے بلکہ تنگ آکر کسی قسم کی ہنگامہ آرائی کے خدشات بھی پائے جاتے ہیں۔آرپی او فیصل آباد میاں جاوید اسلام نے گزشتہ روز سنٹرل جیل کا دورہ کیااور مختلف ذرائع سے معلومات حاصل کیں۔ بتایاگیاہے کہ جیل میں دوجنریٹر ہیں۔ ایک جنریٹر کی جنریشن پاور اتنی ہے کہ کم از کم تین دیہاتوں کو بجلی فراہم کی جاسکتی ہے مگر اس جنریٹر کو چلانے کےلئے تقریباًایک ڈرم تیل فی گھنٹہ کے حساب سے جل جاتاہے اور حکومت کا پاس اتنا تیل دینے کےلئے فنڈز نہیں ہیں۔ دوسرا جنریٹر جیل کی بیرونی چاردیواری کے اوپر نصب سکیورٹی سسٹم چلایاجاتاہے اور یہ بہت ہی حساس جیل ہے جہاں سابق صدر پرویز مشرف پر حملہ کے ملزمان سابق وزیراعظم شوکت عزیز پر حملہ کے ملزمان جی ایچ کیو پر حملہ کے ملزمان، حساس ادارے پر حملہ کے ملزمان مذہبی اور جہادی تنظیموں اور تحریک طالبان پاکستان سے تعلق رکھنے والے خطرناک لوگ بند ہیں۔ اسی طرح اگر بجلی بند ہوگی تو جیل کی بارکوں میں پانی کیسے پہنچے گا شدید گرمی میں ان کے پاس کچھ ڈھارس پانی کی صورت میں ہی ہوسکتی ہے۔ قیدی نیم برہنہ ہوکر اپنے اوپر پانی ڈال کر گرمی کا مقابلہ کرتے ہیں۔

قیدی اذیت

مزید :

صفحہ اول -