دہشتگردی کی روک تھام کیلئے جلدآل پاڑیز کانفرنس بلائں گے

دہشتگردی کی روک تھام کیلئے جلدآل پاڑیز کانفرنس بلائں گے

  

                             لاہور(جنرل رپورٹر، سپیشل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ ملک میں بڑھتی ہوئی دہشت گردی کی روک تھام کےلئے بہت جلد آل پارٹیز کانفرنس بلا رہے ہیں، توانائی بحران کے حل کےلئے ایمرجنسی اقدامات اٹھانا ہوں گے، جنگی بنیادوں پر کام کیا جائیگا، پنجاب بھر میں 350رمضان بازار قائم کئے جائیں گے، 4 ارب روپے کی سبسڈی دی جائے گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پنجاب اسمبلی اور اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا، تفصیلات کے مطابق پنجاب کلب میں خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ ملک میں بڑھتی ہوئی دہشتگردی کی روک تھام کیلئے بہت جلد آل پارٹیز کانفرنس بلا رہے ہیں‘ وزیر اعظم نواز شریف اعلان کر چکے ہیں وہ ادلے بدلے پر یقین نہیں رکھتے اس لئے پرویز مشرف کے ٹرائل کا تعلق12اکتوبر 1999ءسے نہیں بلکہ 2007ءکے غیر آئینی اور قانونی اقدام سے ہے‘ملک کا سب سے بڑا مسئلہ لوڈ شیڈنگ ہے جسے ہنگامی بنیادوں پر ختم کرنے کیلئے پالیسی مرتب کر رہے ہیں‘عوام نے بالخصوص پنجاب اور بالعموم پاکستان میں مسلم لیگ (ن) کو کارکردگی کی بناءپر ووٹ دیئے ا ور پنجاب کی تاریخ میں پہلی بار کسی ایک پارٹی کے 84فیصد نمائندگان منتخب کیا ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ صوبائی وزیر خزانہ نے پنجاب کا ہمہ گیر بجٹ پیش کیا جو حکومت کا ویژن ہے جبکہ ہاو¿س نے اس پر پرمغز عمدہ باتےں کیں اور اپوزیشن لیڈر نے تجاویز بھی پیش کیں۔ انہوں نے کہا کہ 1997اور 2003ءکے انتخابات میں زمین آسمان کا فرق ہے۔ اس وقت صرف ایک ٹی وی چینل تھا اور چند اخبارات جبکہ آج درجنوں نہیں بلکہ سینکڑوں چینلز اور اخبارات ہیںاور میڈیا طاقتور بھی ہے۔حالیہ انتخابات میں تمام سیاسی جماعتوں نے اشہارات کے ذریعے اپنا اپنا نقطہ نظر اور منشور پیش کیا۔ الیکشن مہم میں اپنا وژن عوام کے سامنے رکھا۔ 1997ءمیں عوام کی چوائس صرف 2جماعتوں میں سے تھی جبکہ اس دفعہ انتخابات میں 2سے زائد جماعتیں تھیں اور اسٹیبلشمنٹ بھی غیر جانبدار تھے ۔مسلم لیگ (ن) نے گزشتہ 5سال عوام کی خدمت تھی اور فرینڈلی اپوزیشن کا طعنہ بھی سناجس سے جان چھڑانا مشکل ہو گئی تھی‘ تمام کمزویوں کے باوجود عوام نے اس ایوان میں دوتہائی سے بھی زیادہ اکثریت دی جس پر ہمارا سر اللہ تعالیٰ کے حضور جھکا ہواہے۔بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ ہم نے ٹیکس صرف امیر لوگوں پر لگایا ہے ، غریب آدمی پر نہ تو کوئی ٹیکس لگا ہے نہ ہی کوئی بوجھ ڈالا گیا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جسٹس باقر پر حملہ کی شدید مذمت کرتے ہیں اور دہشت گردی کے واقعات کی روک تھام کیلئے بہت جلد آل پارٹیز کانفرنس بلا رہے ہیں جس میں ٹھوس نتائج برآمد کرنے کی کوشش کریں گے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف کے ٹرائل کا تعلق 12اکتوبر کے ماورائے اقدام سے نہیں ۔ وزیر اعظم نواز شریف کہہ چکے ہیں کہ وہ ادلے بدلے پر یقین نہیں رکھتے ۔یہ معاملہ 3نومبر 2007ءکے غیر قانونی اقدام پر ہے جس میں ججز کو نظر بند کیا گیا تھا، عدالتوں کو تالے لگائے گئے اور انصاف کو تار تار کیا یگا ۔سپریم کورٹ نے اس پر از خود نوٹس لیا ،ہم سے جواب مانگا تھا جو داخل کرادیا گیا کیونکہ وزیر اعظم نے آئین اور قانون کے تحفظ کا حلف لیا ہوا ہے۔ علاوہ ازیں اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ ملک کو توانائی کے حوالے سے ایمرجنسی کی صورتحال کا سامنا ہے چنانچہ اس سلسلے میں ایمرجنسی اقدامات ہی اٹھانا ہوں گے مسلم لیگ ن کی حکومت توانائی بحران کےلئے پر عزم ہے توانائی کے بحران کے حل کے سوا کوئی اور آپش نہیں، عوام کو لوڈ شیڈنگ سے نجات دلانے کےلئے جنگی بنیادوں پر کام کیا جائے گا۔ کابینہ کمیٹی برائے توانائی تیز رفتاری کے ساتھ قابل عمل منصوبوں کا جائزہ لے اور روزانہ اجلاس کر کے قابل عمل منصوبے سامنے لائے۔ میں خود ہفتے میں 3 بار کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے اجلاس کی صدارت کروں گا۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ بائیوماس منصوبے میں استعمال ہونے والے میٹریل کے حوالے سے قابل اعتماد ڈیٹا جمع کیا جائے۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ کو بائیو گیس، بائیو ماس اور سولر انرجی سے ٹیوب ویلز چلانے کے بارے میں بریفنگ دی گئی بعد ازاں رمضان بازاروں کے سلسلہ میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت رمضان المبارک کے دوران عام آدمی کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کرے گی۔ اشیائے ضروریہ کی سستے داموں فراہمی کیلئے تقریباً4 ارب روپے کی سبسڈی دی جائے گی۔ پنجاب بھر میں 350 رمضان بازار قائم کئے جائیں گے۔ آٹے کے 20 کلو کے تھیلے پر رمضان بازاروں میں100 روپے جبکہ اوپن مارکیٹ میں 60 روپے سبسڈی دی جائے گی۔ وزرا¿ اور سیکرٹریز باقاعدگی سے رمضان بازاروں کے دورے کریں گے۔وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ برس کی طرح مسلم لیگ (ن) کی پنجاب حکومت نے امسال بھی بجٹ میں عام آدمی کو سہولت فراہم کرنے کیلئے 4 ارب روپے کی خطیر رقم مختص کی ہے۔ اس عوام دوست اقدام کا مقصد شہریوں کو گراں فروشوں اور ذخیرہ اندوزوں کے استحصال سے بچانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کے دوران ذخیرہ اندوزی اور مصنوعی مہنگائی پیدا کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا اور اس ضمن میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹوں کو پوری طرح متحرک کیا جائے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف سے ترکی کی ایل این جی کی کمپنی گلوبل انرجی انفراسٹرکچر کے چیئرمین احمد جالسکان نے یہاں ایوان وزیراعلیٰ میں ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران پنجاب حکومت اور ترکی کی کمپنی کے درمیان ایل این جی کے شعبہ میں تعاون بڑھانے کے امکانات کا جائزہ لیا گیا۔ گلوبل انرجی انفراسٹرکچر کے پاکستان میں چیف ایگزیکٹو آفیسر فرخ قیوم، شعبہ سپلائی اینڈ ٹریڈنگ کے سربراہ الیگزینڈر شاماتوک، صوبائی وزیر توانائی شیر علی خان، مشیر عزم الحق، خواجہ احمد حسان، ایم ڈی سوئی گیس اور دیگر متعلقہ افسران بھی اس موقع پر موجود تھے۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ترکی کی بہت سی کمپنیاں پنجاب حکومت کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہیں۔ ایل این جی کی ترک کمپنی کی جانب سے پاکستان کے توانائی بحران میں تعاون کی پیشکش خوش آئند ہے۔ انہوں نے کہا کہ توانائی کے بحران نے پاکستان میں صنعتوں کا پہیہ روک دیا ہے۔

شہباز شریف

مزید :

صفحہ اول -