جنسی تعلق کے ذریعے منتقل ہونے والی خطرناک بیماری ان دو چینی کلرکوں کو نوٹ گنتے کیسے لگ گئی ؟جان کر آپ بھی پریشان ہو جائیں گے

جنسی تعلق کے ذریعے منتقل ہونے والی خطرناک بیماری ان دو چینی کلرکوں کو نوٹ ...
جنسی تعلق کے ذریعے منتقل ہونے والی خطرناک بیماری ان دو چینی کلرکوں کو نوٹ گنتے کیسے لگ گئی ؟جان کر آپ بھی پریشان ہو جائیں گے

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک) جنسی بیماریوں کے پھیلاﺅ کے بہت سے مختلف طریقوں کے بارے میں سب جانتے ہیں لیکن چین میں ایک بینک کے ملازمین میں کرنسی نوٹوں کے زریعے جنسی بیماری منتقل ہونے کی خبر نے سب کو حیران کر دیا۔

چینی میڈیا کے مطابق یی جیانگ صوبے کے شہر وینزو کے ایک بینک کے دو ملازمین کو ڈاکٹروں نے بتایا کی ان میں جنسی بیماری کا انتقال آلودہ کرنسی نوٹوں کو چھونے سے ہوا تھا۔ متاثر ہونے والے دو افراد میں سے ایک 30 سالہ خاتون ہیں جن کا کہنا ہے کہ ان کا اپنے شریک حیات کے علاوہ کسی سے تعلق نہیں جبکہ خاتون کے شریک حیات کو جنسی بیماری سے پاک قرار دیا گیا ہے۔

وینزو سٹی ہسپتال کی ایک گائنا کالوجسٹ کا کہنا ہے کہ غالباً متاثرہ خاتون نے آلودہ کرنسی نوٹوں کو چھونے کے بعد ہاتھ دھوئے بغیر واش روم کا استعمال کیا اور بیماری اس کے جسم میں منتقل ہو گئی۔ ایک اور ڈاکٹر لیفیفی نے بتایا کہ ان کی ایک سابقہ مریضہ بھی کرنسی نوٹوں کو چھونے سے جنسی بیماری کا شکار بن چکی ہیں۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ زیادہ تر جنسی بیماریاں محض چھونے سے منتقل نہیں ہوتی ہیں، البتہ ہرپیز وائرس سمیت کچھ ایسی بیماریاں ہیں جو متاثرہ سطح کو چھونے سے جسم میں منتقل ہو سکتی ہیں۔ ان خطرات کے پیش نظر جلد پر زخم ہونے کی صورت میں جلد کو آلودہ اشیاءکے ساتھ چھونے سے بچانا چاہیئے اور ایسی صورت میں مشترکہ واش روم کے استعمال سے بھی پرہیز کرنا چاہئیے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -