سینما انڈسٹری کو اس مقام پر لانے کا کریڈٹ ہمارے ادارے کو جاتاہے،سہیل خان

سینما انڈسٹری کو اس مقام پر لانے کا کریڈٹ ہمارے ادارے کو جاتاہے،سہیل خان

  

لاہور(فلم رپورٹر)فلمساز سہیل خان نے کہا ہے کہ ’’شورشرابہ‘‘ پہلی پاکستانی فلم ہوگی جس کی تکنیکی معاونت کے لئے لوگ بھارت سے آرہے ہیں ۔ مہیش بھٹ کے ساتھ کو پروڈکشن یہ سوچ کر ہی شروع کی تھی کہ میں نے اپنی فلم اور سینما انڈسٹری کی رونقیں بحال کرنی ہیں ۔وہ گذشتہ روز میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے ۔ سہیل خان نے کہا کہ آج سینما انڈسٹری جس مقام پر کھڑی ہے اس کا کریڈٹ ہمارے ادارے کو جاتا ہے کیونکہ ہم نے ہی پاک بھارت کو پروڈکشن کے تحت بننے والی فلمیں ’’ جنت ‘‘، ’’گینگسٹر‘‘ ، ’’دی کلر‘‘ ،’’راز ٹو‘‘ جیسی فلموں کی نمائش پاکستان میں ممکن بنائی۔ انہوں نے کہا کہ جب محسوس کیا کہ اب کو پروڈکشن کی بجائے پاکستان میں ہی فلمیں بنانی چاہئیں تو ’’شور شرابہ‘‘ اور ’’خوشی ‘‘ جیسے میگا پراجیکٹس کا آغاز کیا ۔ جس میں سے ’’شور شرابہ ‘‘ جو ماہ جولائی میں سیٹ کی زینت بننے جارہی ہے اس کے لئے بولی وڈ سے ڈائریکٹر اور کیمرہ مین کی خدمات حاصل کی ہیں۔ جن کی معاونت فلم میکنگ کی تربیت لینے والے ٹیلنٹ کریں گے ۔ایک سوال کے جواب میں سہیل خان نے کہا کہ مجھے کوئی پرواہ نہیں کہ کون کیا کہہ رہا ہے ،فلمساز ہونے کی حیثیت سے وہی کروں گا جو اچھے لگے گا ۔

مزید :

کلچر -