کرکٹ میری روزی روٹی ہے،کوئی نہیں چھین سکتا،معین خان

کرکٹ میری روزی روٹی ہے،کوئی نہیں چھین سکتا،معین خان

  

کراچی (آئی این پی) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور چیف سلیکٹر معین خان نے کہا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی) نے مجھ سے کوئی زیادتی نہیں کی لیکن اگر پی سی بی میں دوبارہ موقع ملا تو کام کرنے کیلئے تیار ہوں‘کرکٹ میری روزی روٹی ہے اور میں اس سے دور نہیں رہ سکتا‘پہلے بھی اچھے سے کام کیا اور آئندہ بھی کروں گا۔واضح رہے کہ ورلڈ کپ 2015 میں بحیثیت چیف سلیکٹر ٹیم کے ساتھ موجود معین خان پر ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ سے قبل کسینو جانے پر شدید تنقید کی گئی تھی اور اسی وجہ سے پی سی بی نے انہیں وطن واپس بلا لیا گیا تھا۔چیئرمین پی سی بی نے اس معاملے پر معین خان کی سرزنش بھی کی تھی جنہوں نے اپنی غلطی کا اعتراف کر لیا تھا اور بعد میں انہیں عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا اور تنازع کے بعد معین پہلی مرتبہ میڈیا کے سامنے آئے ہیں۔

کراچی میں نجی کرکٹ ٹورنامنٹ کے افتتاح کے موقع پر معین خان نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ پی سی بی نے میرے ساتھ کوئی زیادتی نہیں کی، مجھ میں ہی کوئی خامی تھی جسکے باعث مزید کام کرنے کا موقع نہیں دیا گیا۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں جب ٹیم سے ڈراپ کیا جاتا تو اپنا احتساب خود کرتا تھا اور بورڈ میں بھی جب عہدے سے ہٹایا گیا تو اپنا احتساب خود کیا، میں اپنی غلطیوں سے سیکھ کر آگے بڑھتا ہوں۔1992 میں ورلڈ جیتنے والی ٹیم کے اہم رکن معین خان کا مزید کہنا تھا کہ کرکٹ میری روزی روٹی ہے اور میں اس سے دور نہیں رہ سکتا۔سابق چیف سلیکٹرنے کہا کہ اگر مجھے دوبارہ موقع ملا تو ضرور اپنی خدمات پیش کروں گا، پہلے بھی اچھے سے کام کیا اور آئندہ بھی کروں گا۔سری لنکا کیخلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں قومی ٹیم کی کارکردگی پر معین خان کا کہنا تھاکہ پہلے ٹیسٹ میں پاکستان نے بہترین کھیل پیش کیا لیکن کولمبو ٹیسٹ کے پہلیروز غیرذمہ دارنہ بیٹنگ کے باعث سری لنکن ٹیم حاوی ہوگئی اور اب پاکستان کو میچ میں کم بیک کرنے کے لئے بہت محنت کرنا ہوگی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -