قومی کھیل کی بقا ء کیلئے فنڈز کی فراہمی یقینی بنائی جائے،پروین سکند ر گل

قومی کھیل کی بقا ء کیلئے فنڈز کی فراہمی یقینی بنائی جائے،پروین سکند ر گل

  

لاہو (اے پی پی) پاکستان ہاکی فیڈریشن (پی ایچ ایف) ویمن ونگ کی نائب صدر پروین سکندر گل نے کہا ہے کہ ہاکی ہمارا قومی کھیل ہے اور اسکے فروغ کے لئے فنڈز کی فراہمی ،اکیڈمیوں کا قیام،زیادہ سے زیادہ ٹورنامنٹس، طویل دورانیہ کے تربیتی کیمپ کا انعقاداور سکولوں میں طلباء و طالبات کے لئے ہاکی کھیلنا لازمی قرار دیا جائے۔ نیشنل ہاکی سٹیڈیم لاہور میں جمعہ کے روز اے پی پی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سکولوں میں ہاکی کے کھیل کو لازمی قرار دینے سے گراس روٹ سطح پر ہاکی کا ٹیلنٹ ملے گا، اکیڈمیوں کے قیام سے نئے ٹیلنٹ کی صلاحیتوں میں نکھار لانے میں مدد ملے گی، ہاکی کا کھیل کرکٹ کے مقابلے میں بہت مہنگا ہے جو کہ ہر بچے کی استطاعت سے باہر ہے، سکولوں ،کالجوں اور کلبوں میں ہاکی کے سستے سامان کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے اور زیادہ سے زیادہ فنڈز دیئے جائیں ۔پروین سکندر گل نے کہا کہ ہاکی کی خواتین کھلاڑیوں کا تعلق ملک کے مختلف شہروں سے ہوتا ہے

اسلئے ان کے لئے طویل دورانیہ کے تربیتی کیمپ اور زیادہ سے زیادہ ٹورنامنٹس کا انعقاد ضروری ہے ۔انہوں نے ایک سوا ل کے جواب میں بتایا کہ بنکوں سمیت دیگر اداروں کو چاہئے کہ وہ ویمن ہاکی کے فروغ کے لئے ویمن ہاکی ٹیمیں بنائیں اور ان کی زیادہ سے زیادہ ٹورنامنٹس میں شرکت کروائیں تو قومی ویمن ہاکی ٹیم کو زیادہ سے زیادہ ٹیلنٹ ملے گا جس سے قومی ہاکی ٹیم کی کارکردگی میں اضافہ ہوگا ۔پروین گل نے کہا کہ خواتین ہاکی پلیئرز شادی کے بعد بھی اپنے کھیل کو جاری رکھ سکتی ہیں اور ماضی میں شمسہ ہاشمی ،صائمہ افضل سمیت کئی کھلاڑی ایسی تھیں جنہوں نے شادی کے بعد بھی اپنے کھیل کو جاری رکھا اور ملک کے لئے بے پناہ خدمات سر انجام دیں ۔انہوں نے کہاکہ ملک میں ہاکی کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے لیکن حکومت کے ساتھ ساتھ کارپوریٹ سیکٹرز کی بھی سر پرستی کی ضرورت ہے ۔اسپانسر ادارے زیادہ تر کرکٹ کے کھیل کو اسپناسر کرتے ہیں اور ہاکی کے کھیل کو نظر انداز کردیتے ہیں ۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -