ملک بھر میں بجلی لوڈشیڈنگ اور کراچی ہلاکتوں کیخلاف اپوزیشن کے مظاہرے

ملک بھر میں بجلی لوڈشیڈنگ اور کراچی ہلاکتوں کیخلاف اپوزیشن کے مظاہرے

  

 لاہور/کراچی/چارسدہ(نمائندہ خصوصی،سٹاف رپورٹر،بیورورپورٹ) ملک بھر میں جاری بجلی کی بدترین شیڈنگ کے خلاف پوزیشن نے یوم احتجاج اور کراچی میں گرمی سے ہونے والی ہلاکتوں پر گزشتہ روز یوم سوگ منایا، اپوزیشن جماعتوں تحریک انصاف ، پیپلزپارٹی ، عوامی تحریک ، مسلم لیگ ق ، سنی اتحاد کونسل، جماعت اسلامی ، اور مجلس وحدت مسلمین کے رہنماؤں اور کارکنوں نے ریلیاں نکالیں اور حکومت کے خلاف زبردست نعرے بازی کی ، سینکڑوں کارکنوں نے اپنے ہاتھوں میں اپنی اپنی پارٹیوں کے پرچم ،بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے ، ۔ شر کاء نے وفاقی وزیر پانی وبجلی خواجہ آصف اور وزیر مملکت عابد شیر علی سے فوری استعفے کا مطالبہ کر دیا ۔لاہور میں تحریک انصاف کے صوبائی آرگنائزر چوہدری سرور ‘اپوزیشن لیڈر میاں محمودالر شید ‘پیپلزپارٹی پنجاب کے صدر منظور وٹو‘جنوبی پنجاب کے صدر مخدوم احمد محمود ‘عوامی تحر یک کے ناظم اعلی رحیق عباسی ‘(ق) لیگ کے جنرل سیکرٹری چوہدری ظہیر الدین ‘جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ ‘مجلس وحدت مسلمین کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ اسد عباس کی قیادت میں نکالی گئی احتجاجی ریلی نکالی میں شر کاء نے پنی اپنی پارٹیوں کے پرچم بینرز اور پلے کارڈ بھی ہاتھوں میں پکڑرکھے تھے جن پر ’’بجلی دو بجلی دو ‘‘گراتی ہوئی دیواروں کو ایک دھکا اور دو ‘‘ظلم کے یہ ضابطے ہم نہیں مانتے ‘نندی پور کی بجلی کہاں گئی ؟کے نعرے درج تھے جبکہ اس موقعہ پر چےئر مین عمران خان کے مشیر عبد العلیم خان ‘اعجاز احمد چوہدری ‘ میاں اسلم اقبال ،لاہور کے ڈپٹی آرگنائزر مہر واجد ‘شعبہ خواتین کی صدر ڈاکٹر زرقا‘پیپلزپارٹی لاہور کی صدر ثمینہ خالد گھر کی ‘پیپلزپارٹی شعبہ خواتین لاہور کی صدر فائزہ احمد ملک ، بشری ملک ،میاں محمد ایوب،غلام محی الدین دیوان،زاہد زوالفقار خان‘ فضل بٹ‘ بیلم حسنین‘ فرخندہ ملک‘ اسلم گل ‘ راجہ عامر خان‘ جہاں آرء وٹو‘ سہیل ملک،عامر سہیل بٹ‘ شہباز ‘ عدنان ہنجراء ،میان نصیر ‘ خرم فاروق‘ عامر حسن شریف آصف ناگرہ سمیت اپوزیشن جماعتوں کے دیگر قائدین بھی موجود تھے جبکہ لاہور پر یس کلب کے باہر احتجاجی مظاہر ے سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے رہنما سینٹر اعتزاز احسن نے کہا کہ لوڈشیڈنگ کے خاتمہ میں ناکامی پرشہباز شریف کو نیا نام رکھنے کیلئے بہت مواقع دئیے تاکہ ان کی تضحیک نہ ہو مگر انہوں نے اپنا کوئی نام تجویز نہیں کیا اب ہم نے ان کا نام تجویز کرنے کا عوام کو موقع دیا ہے اس ایک بکس رکھ دیا جس لوگ نام تجویز کر کے اس میں ڈال رہے ہیں جس کا اعلان پیپلزپارٹی لاہور جلد کرے گی تاہم شہباز شریف کا زیادہ تر نام کلابازی شریف دیکھنے میںآیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اپنی ناکامی پر وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف کو فوری مستعفی ہو جانا چاہئے۔ اعتزاز احسن نے مزید کہا کہ متحدہ اپوزیشن کا یہ احتجاج پہلا قدم ہے جو اب اپنی منزل پر پہنچ کر دم لے گا ۔ تحر یک انصاف پنجاب کے صوبائی آرگنائزر چوہدری محمدسرورنے کہا ہے کہ انتخابی مہم میں قوم کو اندھیرے ختم کر نے کی تسلیاں دینے والے حکمرانوں کی ناقص پا لیسوں کی وجہ سے ملک اندھیروں میں ڈوب رہا ہے اور ملک میں انصاف نام کی کوئی چیز نہیں جو حکمران عوام کو انصاف اور بنیادی سہو لتیں فراہم نہیں کرسکتے انکو اقتدار میں رہنے کا کوئی حق نہیں انکو گھر جانا ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ نے بیڈ گورننس کے نئے ریکارڈ قائم کیے ہیں انکی قیادت عام انتخابات سے پہلے ملک میں6ماہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کر نے اور وعدہ پورا نہ کر نے پر نام بدلنے کی باتیں کرتے رہے ہیں مگر آج بجلی کی بدتر ین لوڈشیڈ نگ کی وجہ سے گر می سے سینکڑوں ہلاکتوں پر بھی حکمران خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں اور ٹس سے مس ہونے کو تیار نہیں جو ظلم اور بے حسی بدتر ین مثال ہے جسکی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کی بدتر ین لوڈشیڈ نگ کی وجہ گر می کی شدت سے ہونیوالی ہلاکتوں کے ذمہ بھی وفاقی اور سندھ کے نااہل حکمران ہے اور ان ہلاکتوں پر انکے خلاف آئین وقانون کے مطابق مقدمے درج کر کے سخت سے سخت کاروائی کی جانی چاہیے ۔ اپوزیشن لیڈر میاں محمو دالرشید اور لاہور کے آرگنائزر شفقت محمودنے کہا کہ (ن) لیگ قوم کیلئے عذاب کی شکل اختیارکر چکی ہے اور مینار پاکستان پر احتجاجی کیمپ لگاکر تماشے کر نیوالے شہبا زشر یف آج خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں تحر یک انصاف کے اقتدار میں آنے سے ہی ملک سے بجلی کی لوڈشیڈ نگ سمیت دیگر بحرانوں کا مکمل خاتمہ ہو گا۔ پیپلزپارٹی کے صوبائی صدر میاں منظوراحمد وٹو نے کہا کہ (ن) لیگ کی حکو مت مکمل ناکام ہو چکی ہے اور بجلی کی بدتر ین لوڈشیڈ نگ اور گرمی کی شدت کی وجہ سے ہونیوالی ہلاکتوں کی ذمہ دار بھی (ن) لیگ کی وفاقی حکو مت ہے اور ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ وفاقی وزیر پانی وبجلی اور وزیر مملکت پانی وبجلی فوری طور پر اپنے عہدوں سے استعفیٰ دیں اور اگر (ن) لیگ کی وفاقی حکو مت بجلی کی بدتر ین لوڈشیڈ نگ ختم نہیں کرسکتی تو انکو فوری اقتدار سے الگ ہو جا ناچاہیے اور ملک میں عوام کو اپنے نئے نمائندوں کو منتخب کر نے کام موقعہ دیا جائے ۔عوامی تحر یک کے رحیق عباسی نے کہا کہ گر می اور لوڈشیڈ نگ کی وجہ سے ہونیوالی ہلاکتوں پر (ن) لیگی قیادت کے خلاف قتل کامقدمہ درج ہو نا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ شہبا زشر یف مینارپاکستان پر بجلی کی لوڈشیڈ نگ کے خلاف احتجاجی کیمپ لگا کر تماشے کرتے رہے ہیں اور بجلی کی لوڈشیڈ نگ ختم نہ کر نے پر اپنا نام بدلنے کی باتیں کر نیوالے شہبا زشر یف بتائے اب انکا نیا نام کیا ہے ؟۔(ق) لیگ کے چوہدری ظہیر الدین نے کہا کہ بجلی کی بدتر ین لوڈشیڈ نگ نے عوام کی چیخیں نکال دیں ہیں اور حکمران صرف ناکام نہیں ہوئے بلکہ ناکامیوں کے ریکارڈ قائم کر رہے ہیں اور پنجاب میں ڈاکے ‘فاقے اور ناکے عوام کا مقدر بن چکے ہیں لیکن اگر اپوزیشن جما عتیں متحد ہوجائیں تو بہت جلد حکمرانوں کا بوریا بستر گول ہوجائیگا جماعت اسلامی کے سیکرٹر ی جنرل لیاقت بلوچ نے کہا کہ حکمران مکمل طورپر ناکام ہو چکے ہیں اور تمام تر دعوؤں کے باوجود بجلی کی فراہمی اور لوڈشیڈ نگ کے خاتمے میں مکمل ناکام ہوچکے ہیں اور بجلی کی لوڈشیڈ نگ کی وجہ سے شدید گر می میں ہونیوالی ہلاکتوں کے ذمہ دار بھی نااہل حکمران ہیں جن کو اب گھر جانا ہو گاکیونکہ عوام انکو مزید برداشت کر نے کیلئے تیار نہیں اس موقعہ پر دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ کراچی میں پاکستان پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن کی طرف سے شہر قائد کے تمام اضلاع میں مختلف مقامات پر احتجاجی دھرنے دیئے گئے جن میں بشمول پی پی پی رہنما و کارکناں عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ اس موقع پر حالیہ شدید گرمی کے دوران جاں بحق ہونے والے افراد کی ایصال و ثواب کے لئے دعا بھی کی گئی۔ پی پی پی رہنماؤں نے اپنے خطاب میں کے الیکٹرک اور وفاقی حکومت کے رویے کی سخت الفاظ میں مذمت کی اور مطالبہ کیا کہ کے الیکٹرک کے خلاف فی الفور کارروائی کی جائے اور وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف اور مملکت وزیر عابد شیر علی کو اپنے عہدوں سے سبکدوش کیا جائے۔ کراچی پریس کلب ، حبیب بینک چورنگی، لبرٹی چوک طارق روڈ، کبوتر چوک، حیدری ناظم آباد، ملیر پریس کلب اورکورنگی نمبر 5کے مقامات پر ہونے والے مظاہروں ودھرنوں کے دوران پی پی پی جیالے کے الیکٹرک و نواز لیگ کی وفاقی حکومت کی خلاف نعرے بازی کرتے رہے۔ کراچی پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے قاسم بلوچ،صوبائی وزیر جاوید ناگوری اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ نواز لیگ کی وفاقی حکومت نے سندھ کو وفاق سے نکال دیا ہے۔ سندھ کی راج دھانی میں کوئی جیئے یا مرے اس سے وفاق کا کوئی تعلق نہیں۔ کے الیکٹرک اور وفاقی وزارت پانی و بجلی کی ملی بھگت سے شہر قائد کو بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ عطا کی گئی ،درجنوں افراد کی جاں بحق ہونے کے باوجود وزیراعظم خواجہ آصف، عابد شیر علی کو شہر قائد کے باسیوں پر رحم نہ آیا۔ خواجہ آصف و عابد شیر علی کا یہ بیان کہ کے الیکٹرک ان کے اختیار سے بالا ہے۔ اعتراف ہے کہ وزیراعظم نے پانی و بجلی کی اہم وزارت نااہلوں کے حوالے کی ہے۔ جنہیں فی الفور سبکدوش کیا جائے حبیب بینک ، چورنگی پر احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے ندیم بھٹو ودیگر رہنماؤں نے کہا کہ کے الیکٹرک کی انتظامیہ اربوں روپے کمانے کے باوجود اپنے صارفین کی حق تلفی کررہی ہے۔ وفاق بھی اس معاملے کا نوٹس لینے کے بجائے کے الیکٹرک کی صارفین دشمن پالیسی کی پشت پناہی کر رہا ہے۔ناظم آباد اور طارق روڈ لبرٹی چوک پر احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے پی پی پی رہنماسعید چاؤلہ، ظفر صدیقی ودیگر نے کہا کہ نواز شریف فقط ایک صوبے کا وزیراعظم بنا ہوا ہے۔ اسے صرف پنجاب کا مفاد عزیز ہے اور اس پالیسی کا نتیجہ چھوٹے صوبوں کی حق تلفی موجب ہورہا ہے۔ چھوٹے صوبوں میں احساس محرومی بڑھ رہی ہے۔ رہنماؤں نے سوال کیا کہ وفاقی حکومت ایک طرف پنجاب میں سولر پارک، ونڈ انرجی ودیگر متبادل ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے لگا رہی ہے تو دوسری طرف حب پاور پراجیکٹ جیسے منصوبے خاموشی سے ختم کر دیئے ہیں اور سندھ کو شمسی توانائی ونڈانرجی کے منصوبے لگانے پر قدغن لگا دی ہے۔ ملیر پریس کلب اور کورنگی نمبر 5کے مقامات پر دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے راجہ عبدالرزاق، مرزا مقبول اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ کراچی میں کئی سو افراد کے جاں بحق ہونے کے باوجود وزیراعظم و وفاق وزرا کو نہ احساس ہوا نہ ان کی کان پر جوں رینگی۔ رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم اپنے رویے پر قوم سے معافی مانگیں اور چھوٹے صوبوں کے متعلق اپنی پالیسی کو تبدیل کریں ،خواجہ آصف اور عابد شیر علی کو سبکدوش کیا جائے اور کے الیکٹرک کی نااہل انتظامیہ کے خلاف فی الفور کارروائی کی جائے۔چارسدہ میں تحریک انصاف اور قومی وطن پارٹی نے بجلی لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے وفاقی حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی کیاس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ واپڈا خیبر پختونخواہ کے عوام کیلئے سفید ہاتھی بن چکا ہے ۔صوبے کے حصے کی بجلی کی ترسیل بحال نہ کی گئی تو واپڈا ہاؤ س پر قبضہ کر کے اختیارات از خود استعمال کرینگے ۔ قومی وطن پارٹی کے ضلعی چیئر مین ایم پی اے ارشد عمرزئی ، ایم پی اے حالد خان ، تحریک انصاف کے عابد خان اور دیگر مقررین نے کہاکہ بجلی خیبر پختونخواہ کی پیداوار ہے لیکن وفاقی حکومت آئین شکنی کرکے خیبر پختونخواہ کے عوام کو بجلی کی سہولت سے محروم کررہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ بد ترین لوڈ شیڈنگ سے نظام زندگی مفلوج ہو چکا ہے ۔ مساجد میں پانی ناپید ہے جبکہ ہسپتالوں میں مریضوں کو دہرے مشکلات کا سامنا ہے ۔گھپ اندھیرے میں افطاری اور سحری کی تیاری نے خواتین کو کھڑے امتخان میں ڈال رکھا ہے ۔ مقررین نے کہاکہ وفاقی حکومت خیبر پختونخواہ پر بجلی چوری کے الزامات لگا رہی ہے ۔ صوبائی حکومت بجلی چوری کے روک تھام کیلئے وفاقی حکومت کے ساتھ بھر پور تعاون کر رہی ہے مگر جب محکمہ میں اوپر سے نیچے تک چور ڈاکو بیٹھے ہو تو چوری پر کس طرح قابو پا یا جا سکتاہے ۔

مزید :

صفحہ اول -