جعلی مشروبات بنانے والے ملزم کی درخواست ضمانت خارج

جعلی مشروبات بنانے والے ملزم کی درخواست ضمانت خارج

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے جعلی مشروبات بنانے کے مقدمہ میں ملوث ملزم کی درخواست ضمانت خارج کرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ پولیس جھوٹے مقدمے درج کرتی ہے جس کے بعد ملزم بری ہو جاتے ہیں اور الزام عدالتوں پر آ جاتا ہے ، عدالت نے ملزم مرتضی ناصر کی درخواست ضمانت کی سماعت شروع ہوئی تو ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیاکہ ڈی ڈی او کی مدعیت میں ملزم مرتضیٰ ناصر کے خلاف جعلی مشروبات کا کاروبار کرنے کے الزامات کے تحت جھوٹا اور بے بنیاد مقدمہ درج کیا گیا ہے جبکہ مقدمہ کا مدعی ڈی ڈی او موقع پر موجود ہی نہیں تھا اور ملزم کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ مقدمہ پچھلی تواریخ میں درج کیا گیا جس سے پولیس اور محکمہ صحت کی بدنیتی ظاہر ہوتی ہے لہٰذا ملزم کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے اسے رہا کرنے کا حکم دیا جائے، عدالتی استفسار پر ڈی ڈی او ہیلتھ نے عدالت میں اعتراف کیا کہ وہ وہ چھاپے کے دوران موقع پر موجود نہیں تھے تاہم ایف آئی آر میں ان کی موجودگی ظاہر کی گئی جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ پولیس جھوٹے اور بے بنیاد مقدمے درج کرتی ہے جن میں ملزم رہا ہو جاتے ہیں اور الزام عدالتوں پر آتے ہیں۔ عدالت نے سیکرٹری صحت کو جھوٹا مقدمہ درج کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا حکم دیتے ہوئے درخواست ضمانت کی سماعت ملتوی کر دی۔

مزید :

صفحہ آخر -