اختیارات کا ناجائز استعمال کرنیوالے افسروں کیلئے محکمے میں گنجائش نہیں، آئی جی

اختیارات کا ناجائز استعمال کرنیوالے افسروں کیلئے محکمے میں گنجائش نہیں، ...

لاہور) وقائع نگارخصوصی )انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب مشتاق احمدسکھیرا نے کہا ہے کہ فرائض میں غفلت اور لاپرواہی کے مرتکب اور انصاف کی فراہمی میں رکاوٹ پیدا کرنے اور اختیارات کو ناجائز استعمال کرنے والے افسروں / اہلکاروں کی محکمے میں کوئی گنجائش نہیں اور اسی مقصد کے تحت محکمہ میں انٹرنل اکاؤنٹیبلٹی کے عمل کو مزید شفاف بنایا جا رہا ہے۔آئی جی پنجاب نے ان خیالات کا اظہار اردل روم میں پیش ہونے والے تین افسروں کے خلاف مختلف انکوائریوں پر فیصلہ دیتے ہوئے کیا اور02 ڈی ایس پیز کے عہدوں میں تنزلی جبکہ01 کو نوکری سے برخاست کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ، ڈی ایس پی گوالمنڈی لاہور ناصر مشتاق کو قتل کے کیس میں غفلت اور لاپرواہی برتنے پر ڈی ایس پی سے انسپکٹر کے عہدے پر تنزلی جبکہ ایس ڈی پی او کبیر والہ ، خانیوال نعیم عزیز کوقتل کے مجرموں کی پشت پناہی اور حقائق کو چھپانے کے الزامات ثابت ہونے پر ڈی ایس پی سے انسپکٹر کے عہدے پر تنزلی کے احکامات جاری کیے ہیں۔

جبکہ ڈی ایس پی چونیاں قصور راجہ صداقت علی کو منشیات فروشوں کی معاونت اور پشت پناہی کے الزامات ثابت ہونے پر نوکری سے برخاست کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں ۔

آئی جی

مزید : صفحہ آخر