امریکی سپریم کور ٹ نے ہم جنس پرستوں کو شادی کی اجازت دے دی

امریکی سپریم کور ٹ نے ہم جنس پرستوں کو شادی کی اجازت دے دی
امریکی سپریم کور ٹ نے ہم جنس پرستوں کو شادی کی اجازت دے دی

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی عدالت نے ہم جنس پرستوں کی آپس میں شادیوں پر پابندی ختم کرتے ہوئے انہیں شادی کرنے کی اجازت دے دی ہے ۔تفصیلات کے مطابق امریکہ کی سپریم کورٹ نے فیصلہ سنایا ہے کہ امریکہ کی کسی بھی ریاست میں ہم جنس پرستوں کا شادی کرنا ایک قانونی حق ہے جس کے بعد 14 امریکی ریاستوں میں ہم جنس پرستوں کی شادی پر عائد پابندی ختم ہو گئی ہے۔

سپریم کورٹ کے جسٹس اینتھنی کینیڈی نے اپنے فیصلے میں کہا کہ درخواست گزار نے قانونی طور پر برابری کی استدعا کی ہے کہ اور آئین ان کو اس کی اجازت دیتا ہے۔تاہم میسیسپی اور لوزیانا جیسے ریاستوں نے کہا ہے کہ ہم جنس پرستوں کو شادی کے لیے اس وقت تک انتظار کرنا ہو گا جب تک انتظامی ایشوز حل نہیں ہو جاتے۔

امریکی صدر براک اوباما نے اس فیصلے کو سراہتے ہوئے اسے ’امریکہ کی جیت‘ قرار دی ہے جبکہ عیسائی قدامت پسندوں نے اس فیصلے کی مذمت کی ہے،آرکنسا کے سابق گورنر اور صدارتی امیدوار مائیک ہکابی نے اس فیصلے پر تنقید کی ہے۔

ہم جنسی پرستوں کی شادی کے خلاف مہم جو گروپ کی وکیل کیلی فیڈورک نے اس فیصلے کے بارے میں کہا ہے کہ عدالت نے ہزاروں امریکیوں کی آواز کو نظر انداز کیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -