ساحل سمندر کی خوشبو دور سے ہی کیوں آ جاتی ہے؟دلچسپ وجہ تحقیق میں سامنے آ گئی

ساحل سمندر کی خوشبو دور سے ہی کیوں آ جاتی ہے؟دلچسپ وجہ تحقیق میں سامنے آ ...
ساحل سمندر کی خوشبو دور سے ہی کیوں آ جاتی ہے؟دلچسپ وجہ تحقیق میں سامنے آ گئی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کبھی آپ ساحل سمندر پر جائیں تو آپ محسوس کریں گے کہ سمندر سے ایک انوکھی اور تیکھی سے خوشبو آ رہی ہوتی ہے۔ اکثر لوگ نہیں جانتے ہوں گے کہ سمندر سے یہ تند خوشبو کیسے آتی ہے۔ایک نئی تحقیق میں پتا چلا ہے کہ سمندر میں موجود آبی پودے اس خوشبو کی وجہ ہیں۔ ماہرین کہتے ہیں کہ سمندر میں موجود الجی کی قسم کے پودوں کے خلیوں سے پیدا ہونے والے پروٹین کے بائیوکیمیکل ری ایکشن سے یہ خوشبو پیدا ہوتی ہے جو ان پودوں کو سمندر کے نمکین پانی میں زندہ رہنے میں مدد دیتی ہے۔ ساحل سمندر پر پانی کی سطح پر موجود ان پودوں پر مخصوص قسم کے پھول کھلتے ہیں جن سے ایک خوشبودار مرکب خارج ہوتا ہے جسے Dimethylsulfide(ڈی ایم ایس)کہا جاتا ہے۔ یہ پھول دنیا بھر میں ساحل سمندر پر موجود ہوتے ہیں۔ 

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اسی ڈی ایم ایس کے مالیکیول اس مخصوص خوشبو کی وجہ بنتے ہیں۔ سائنسدانوں کے مطابق اگرچہ یہ بات حتمی طور پر نہیں کہی جا سکتی لیکن ایک طویل عرصہ قبل سمندر سے یہ خوشبو آنی شروع ہوئی تھی اور تب ہی یہ پودے سمندر کے ساحلوں پر نمودار ہوئے تھے۔ ڈی ایم ایس مالیکیول کئی اور طریقوں سے بھی اہم ہیں، مثلاً ان کی وجہ سے پرندے سمندر کی طرف راغب ہوتے ہیں اور یہ مچھلیوں اور پانی پر تیرتی ہوئی مخصوص نباتات تلاش کرنے میں بھی مدد دیتے ہیں جو مچھلیوں کی خوراک ہوتی ہیں۔تحقیقاتی ٹیم کا کہنا ہے کہ انہوں نے سمندر میں روپذیر ہونے والاایک اور بائیوکیمیکل ری ایکشن بھی دریافت کیا ہے جو Dimethylsulfoniopropionate(ڈی ایم ایس پی) کو ڈی ایم ایس میں تبدیل کرتا ہے۔ سمندر میں ڈی ایم ایس بہت زیادہ مقدار میں پیدا ہوتا ہے، ایک اندازے کے مطابق 10ملین ٹن سالانہ سے بھی زیادہ۔یہی وجہ ہے کہ سمندر سے آنے والی خوشبو بہت تیکھی ہوتی ہے۔

 

مزید : ڈیلی بائیٹس