کرکٹ گراؤنڈ میدان جنگ بن گیا ،کھلاڑی لہو لہان،بیٹسمین گرفتار

کرکٹ گراؤنڈ میدان جنگ بن گیا ،کھلاڑی لہو لہان،بیٹسمین گرفتار
کرکٹ گراؤنڈ میدان جنگ بن گیا ،کھلاڑی لہو لہان،بیٹسمین گرفتار

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کھیل کے دوران لڑائی جھگڑا پاکستان ہی نہیں پوری دنیا میں کیا جاتا ہے۔ گزشتہ روز لندن کے نواحی علاقے میں ایک کرکٹ میچ کے دوران بھی ایسا ہی ہوا،جہاں دونوں ٹیمیں آپس میں لڑ پڑیں، ایک دوسرے کی وکٹوں اور بلوں سے خوب دھلائی کی اور پھر جلد ہی صلح بھی کر لی اور اکٹھے چائے پینے بیٹھ گئے۔ اس سے آگے عجیب قصہ ہوا، جو عموماً ہمارے ہاں نہیں ہوتا۔ جب فریقین میں صلح ہو گئی اور اکٹھے ”ٹی پارٹی“ جاری تھی تو اتنے میں پولیس آ دھمکی اور باﺅلر کو بیٹ سے زخمی کرنے والے بلے باز کو گرفتار کر کے لے گئی۔

یہ میچ سوینڈن سول سروس کرکٹ کلب اور بینیکر اینڈ میلک شیم کلب کے درمیان ہو رہا تھا۔نیکر اینڈ میلک شیم کلب کے باﺅلر اینڈریو فٹنر اور وکٹ کیپر نے سوینڈن کلب کے بیٹسمین کو طنزیہ فقرے کسے، جس پر بیٹسمین نے طیش میں آ کر باﺅلر کے منہ پر بیٹ دے مارا۔ اینڈریو بے ہوش ہو کر زمین پر گرپڑا۔ آگ ایسی بھڑکی کہ دونوں ٹیموں کے کھلاڑی آپس میں گتھم گتھا ہو گئے۔ بعد میں اینڈریو کو طبی امداد کے بعد ہوش آگیا اور دونوں ٹیموں نے آپس میں صلح کر لی اور ایک ساتھ چائے پینے لگے۔ اتنے میں پولیس آئی اور بیٹسمین کو گرفتار کر کے لیے گئی۔ ول شائر پولیس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ بیٹسمین نے دوسرے کھلاڑی کے چہرے پر بڑا گھاﺅ لگایا ہے جس سے چہرے میں مستقل بگاڑ آ سکتا ہے۔ ترجمان نے مزید بتایا کہ بیٹسمین کو تفتیش کے بعد ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس