بھارتی وزیر اعظم نے امریکی صدر کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کو کشمیر کی ایک ایسی چیز تحفے میں دیدی کہ سب حیران رہ گئے ،اس کے علاوہ مودی ڈونلڈ ٹرمپ اور انکی اہلیہ کے لئے بھارت سے کیا چیزیں لے کر گئے ؟ساری تفصیلات سامنے آ گئیں

بھارتی وزیر اعظم نے امریکی صدر کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کو کشمیر کی ایک ایسی چیز ...
بھارتی وزیر اعظم نے امریکی صدر کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کو کشمیر کی ایک ایسی چیز تحفے میں دیدی کہ سب حیران رہ گئے ،اس کے علاوہ مودی ڈونلڈ ٹرمپ اور انکی اہلیہ کے لئے بھارت سے کیا چیزیں لے کر گئے ؟ساری تفصیلات سامنے آ گئیں

  


نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی کی بڑھتی ہوئی ’’قربت‘‘ عالمی امن کے لئے سنگین مسائل پیدا کرنے جا رہی ہے ،اس سے قبل بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی کے اعزاز میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں خصوصی ضیافت کا اہتمام کیا ،مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑنے والے بھارتی وزیر اعظم نے وائٹ ہاؤس میں امریکی صدر کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کو پوری دنیا میں مشہور کشمیری شال، بھارتی چائے کی پتی اور خالص شہد کا تحفہ پیش کیا۔

بھارتی نجی ٹی وی چینل ’’این ڈی ٹی وی ‘‘ کے مطابق بھارتی وزیر اعظم 2روزہ دورے پر امریکہ پہنچے تو وائٹ ہاؤس کے دروازے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور انکی اہلیہ میلانیا ٹرمپ نے نریندرا مودی کا استقبال کیا ،امریکی صدر ٹرمپ اور مودی کی یہ پہلی ون آن ون ملاقات تھی جو 20منٹ تک جاری رہی جس کے بعد امریکی صدر نے مودی کے اعزاز میں وائٹ ہاؤس میں پر تکلف ضیافت کا اہتمام کیا ۔مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک اور ظلم و ستم کے پہاڑ توڑنے والے بھارتی وزیر اعظم مودی نے امریکی صدر کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کو کشمیری اور ہماچل پردیش کی ہاتھ سے بنی شالیں ،بھارتی چائے کی پتی اور خالص شہد کا تحفہ دیا ۔بھارتی وزیر اعظم نے میلانیا ٹرمپ کو کانگڑا ویلی کے کاریگروں کے بنائے ہوئے سلور بر سلیٹ بھی تحفے میں پیش کئے ،اس کے علاوہ بھارتی وزیر اعظم نے ٹرمپ کو وہ نایاب پستول بھی بطور تحفہ دیا جس پر ابراہم لنکن کے انتقال کے بعد 1965میں بھارت کی طرف سے یادگاری سٹمپ لگائی گئی تھی ۔نریندرا مودی نے بھارتی پنجاب کے علاقے ہوشیار پور کی لکڑی سے بنی ایک پیٹی کا بھی تحفہ دیا ۔ اس موقع پر موجود میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بھارتی وزیر اعظم مودی نے امریکی صدر اور ان کی اہلیہ کی جانب سے پرتپاک استقبال پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ اور میلانا ٹرمپ کی جانب سے انہیں دیا جانے والا احترام مجھے نہیں بلکہ بھارت کے ایک ارب 25کروڑ ہندوستانی شہریوں کا احترام ہے ،2014ء میں ٹرمپ جب صدر نہیں تھے تب وہ ہندوستان گئے تھے ،اس وقت بھی انہوں نے میرے بارے میں کچھ اچھی باتیں کی تھیں جو آج بھی میرے ذہن میں ہیں ،اپنے بارے میں ان اچھے خیالات پر بھی میں امریکی صدر کا شکری ادا کرتا ہوں ۔بھارتی ٹی وی کا کہنا تھا کہ امریکی صدر نے اقتدار سنبھالنے کے بعد اب تک45سے زائد عالمی رہنماؤں سے ملاقات کی ہے لیکن بھارتی وزیر اعظم مودی وہ پہلے شخص ہیں جن کے اعزاز میں وائٹ ہاؤس میں خصوصی ضیافت کا اہتما م کیا گیا تھا ۔

مزید : بین الاقوامی