تعلیم کسی بھی معاشرہ میں ریڑھ کی ہڈی کی مانند ہے :سارہ صفدر

تعلیم کسی بھی معاشرہ میں ریڑھ کی ہڈی کی مانند ہے :سارہ صفدر

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کی نگران وزیر برائے تعلیم،سماجی بہبود اور مذہبی امور ڈاکٹر سارہ صفدر نے کہا ہے کہ تعلیم کسی بھی معاشرے میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے ،تعلیم کی اہمیت کے پیش نظر شعبہ تعلیم کو توجہ دینا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے محکمہ تعلیم کے ایک اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔محکمہ تعلیم کے حکام نے نگران وزیر تعلیم کو محکمے کی کارکردگی کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔نگران صوبائی وزیر تعلیم نے یقین دلایا کہ موجودہ نگران حکومت محکمہ تعلیم کی بہتری کے لیے کوشاں رہے گی اور توقع ظاہر کی کہ محکمہ تعلیم کے افسران اسی تندہی اور مستعدی سے اپنے فرائض نبھائیں گے۔اس موقع پر ڈاکٹر سارہ صفدر کو بتایا گیا کہ گزشتہ پانچ برسوں کے دوران شعبہ تعلیم کی بہتری کیلئے اقدامات کیے گئے ہیں۔انھیں بتایا گیا کہ ساڑھے 27ہزار سرکاری سکولوں میں بنیادی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا گیا جس میں بجلی اور پانی فراہمی کے ساتھ باتھ رومز اور چاردیواری کی تعمیر شامل ہے۔صوبائی وزیر کو مزید بتایا گیا کہ سکولوں میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کی تعلیم کے لیے آئی ٹی لیبارٹریاں قائم کی گئی ہیں جبکہ 40 ہزار اساتذہ کو بھرتی کیا گیا۔مانیٹرنگ نظام کے ثمرات سے صوبائی وزیر کو آگاہ کرتے ہوئے بتایا گیا کہ اس نظام کی بدولت سکولوں میں اساتذہ کی حاضری میں بہتری ریکارڈ کی گئی ہے۔اساتذہ کی حاضریوں کی شرح میں83 فیصد سے 90 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔اس موقع پر صوبائی وزیر کو سکولوں میں سولرائزیشن،اساتذہ کے استعداد کار بڑھانے کے لیے تربیتی پروگراموں،امتحانی ہالوں میں خفیہ کیمروں کی تنصیب،کھیلوں کے فروغ کے لیے پلے ایریاز کی تعمیرو فراہمی اور سکولوں کی اپگریڈیشن کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔نگران صوبائی وزیر کو گزشتہ پانچ برسوں کے دوران ہونے والی قانون سازی کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا۔ اجلاس میں سیکرٹری تعلیم شاہد زمان،سپیشل سیکرٹری ارشد خان،ڈائریکٹر تعلیم فریداللہ خٹک اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

مزید : کراچی صفحہ اول