چارسدہ میں بچوں کی لڑٓئی پر خون کی ہولی،باپ بیٹا بیٹی سمیت 4افراد قتل

چارسدہ میں بچوں کی لڑٓئی پر خون کی ہولی،باپ بیٹا بیٹی سمیت 4افراد قتل

چارسدہ (بیورو رپورٹ) چارسدہ میں خون کی ہولی ۔ باپ ،بیٹا اور بیٹی سمیت چار افراد قتل ۔ دو افراد زخمی ۔ ایک دیدہ دلیر ملزم واقعہ کے بعد گھر کی چھت پر چڑھ گیا اور مزید قتل و غارت کی دھمکیوں پر اتر آئے ۔ پولیس کی بھاری نفری اور بکتر بند گاڑی نے علاقے کا محاصرہ کرکے ملزم کی گرفتار ی کیلئے سابق ایم پی اے ارشد خان عمر زئی کی خدمات حاصل کیں مگرشاطر ملزم مزاکرات کے دوران زخمی حالت میں پولیس کو چکما دیکر فرار ہو گیا ۔ لواحقین کا پولیس کے کردا ر پر شدید تنقید ۔ مقتولین آنسوؤں اور سسکیوں میں سپر د خاک ۔تفصیلات کے مطابق چارسدہ کے مضافاتی علاقہ ترنگزئی سکول کورونہ میں بچوں کے لڑائی میں بڑے کھود پڑے اور ایک فریق کے عامر اور ولایت شاہ نے اندھا دھند فائرنگ کرکے جاوید ولد کاکی جان ، عابد ولد جاوید ، مسماۃ ریماء دختر جاوید اور ان کے قریبی رشتہ دار فرید ولد سید رحمان کو قتل کر دیا جبکہ واقعہ میں مقتول جاوید کا ایک بیٹا سلمان اور گھر آئے قریبی مہمان عجب خان ولد اجدر زخمی ہو گئے ۔ واقعہ کے حوالے سے مقتول جاوید کے بیٹے نے میڈیا کو بتایا کہ فائرنگ کے واقعہ میں ابتدائی طور پر ان کے والد ، بھائی اور بہن زخمی ہو ئے اور جب ہم ان کوہسپتال منتقل کر رہے تھے تو ملزم عامر ایک بار پھر آئے اور ان کے والد اور بھائی پر دوبارہ فائرنگ شروع کرکے قتل کر دیا ۔انہوں نے مزید کہا کہ واقعہ کے بعد پولیس کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی جبکہ ملزم نے اپنے گھر کے چھت پر پناہ لے لی مگرپولیس خوف کی وجہ سے ملزم کو گرفتار کرنے سے گریز کر تی رہی ۔ مقتول جاوید کے بھائی احسان نے نماز جنازہ کے موقع پر کہا کہ پولیس نے غفلت اور لاپر واہی کے ساتھ ساتھ بزدلی کا مظاہرہ کیا۔ملزم واقعہ کے بعد کئی گھنٹے تک گھر میں موجود رہا مگر پولیس نے ان کو فرار کا موقع دیا ۔ اس حوالے سے ایم پی اے ارشد خان عمر زئی نے بتایا کہ انہوں نے ملزم سے گرفتاری دینے کیلئے مذاکرات کئے اور ملزم نے گرفتاری پر آمادگی بھی ظاہر کی مگر اس دوران شاطر ملزم موبائل بند کرکے رفو چکر ہو گیا ۔ مقتول جاوید کے بھائی اور بیٹے نے ذمہ حکام سے انصاف کی فراہمی اور ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ۔ چاروں مقتولین کو آشکبار آنکھوں کے سامنے آبائی قبر ستان میں سپر د خاک کر دیا گیا ۔ عمر زئی پولیس نے مقتول جاوید کے بیٹے شہاب کی رپورٹ پر ملزمان عامر اور ولایت شاہ کے خلاف چار افراد کے قتل کا مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول