قومی حلقہ 154سے ن‘ پیپلزپارٹی کے امیدوار فائنل‘ جنون تذبذب کا شکار

قومی حلقہ 154سے ن‘ پیپلزپارٹی کے امیدوار فائنل‘ جنون تذبذب کا شکار

ملتان (نیوز رپورٹر) ملتان کے حلقہ این اے 154سے الیکشن میں پیپلز پارٹی اور ن لیگ نے اپنے امیدواروں کا اعلان کردیا ہے جس کے مطابق پیپلزپارٹی کی طرف سے سید عبدالقادر(بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

گیلانی اور ن لیگ کی طرف سے شہزاد مقبول بھٹہ امیدوار ہیں لیکن تحریک انصاف اپنا امیدوار فائنل کرنے میں بدستور تذبذب کا شکار ہے۔ تحریک انصاف کی جانب سے تاحال حلقہ میں موجود دو امیدواروں جن میں حاجی سکندر حیات بوسن اور ملک احمد حسین ڈیہڑ کے بارے میں حتمی فیصلہ نہ ہونے کے باعث افواہوں کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ جاری ہے۔ گزشتہ روز یہ خبر زبان زدعام رہی ہے تحریک انصاف کی جانب سے ملک احمد حسین ڈیہڑ کو ٹکٹ کنفرم کردی گئی ہے جبکہ جنوبی پنجاب کے صدر اتحاق خان خاکوانی کے حلقہ احباب نے اس خبر کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قسم کی افواہیں دانستہ پبلک میں پھیلائی جارہی ہیں جبکہ اس سے ایک روز قبل یہ افواہ گرم تھی کہ حاجی سکندر حیات بوسن کو پارٹی نے ٹکٹ کنفرم کردیا ہے اس ضمن میں جب حاجی شوکت حیات بوسن سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے اس کی تصدیق کرنے کی بجائے اسی پر اکتفا کیا کہ سب ٹھیک ہے اور جو بھی ہوگا بہتر ہوگا۔ اسی طرح پی پی 216بھی تاحال فیصلے کی منتظر ہے جبکہ اس کے چار امیدوار میدان میں اترے ہوئے تھے جن میں ضلعی صدر اعجاز حسین جنجوعہ‘ سٹی صدر ڈاکٹر خالد خان خاکوانی‘ جنرل سیکرٹری سٹی ندیم قریشی اور میاں سعید احمد قریشی مرحوم کے صاحبزادے محمد اسلم قریشی شامل تھے جبکہ بعض ذرائع کے مطابق پی پی 216کے امیدوار چار سے کم ہوکر دو رہ گئے ہیں جن میں ڈاکٹر خالد خان خاکوانی اور اعجاز حسین جنجوعہ ہیں۔ اب پی پی 16کی ہما کس کے سر بیٹھتی ہے اس کا سب کو انتظار ہے اور این اے 154کس مقدر کے سکندر کا نصیب ٹھہرتی ہے۔

این اے

مزید : ملتان صفحہ آخر