بوریوالا: نذیر احمد ارائیں کے دفتر کے سامنے ہنگامہ آرائی‘ فائرنگ کے واقعہ پر ممبر ضلع کونسل‘ 2 کونسلروں سمیت12ملزموں کیخلاف مقدمہ درج

بوریوالا: نذیر احمد ارائیں کے دفتر کے سامنے ہنگامہ آرائی‘ فائرنگ کے واقعہ پر ...

بوریوالا(تحصیل رپورٹر)تھانہ سٹی پولیس نے گذشتہ روز مسلم لیگ ن کے سابق ممبر قومی اسمبلی چوہدری نذیر احمد آرائیں کے دفتر (بقیہ نمبر48صفحہ12پر )

کے سامنے ہنگامہ آرائی نعرہ بازی اور مار پٹائی کے علاوہ ہوائی فائرنگ کے واقعہ کے سلسلہ میں سابق ایم این اے چوہدری نذیر احمد جٹ گروپ اور مسلم لیگ ن کے امیدوار قومی اسمبلی وسابق ممبر قومی اسمبلی چوہدری نذیر احمد آرائیں گروپ کے دو بلدیاتی کونسلرز اور ایک ممبر ضلع کونسل سمیت 12نامزد ملزموں کے خلاف رات گئے زیر دفعہ 16ایم پی او 149,148,337-Hت پ مقدمہ درج کر لیا ہے رپورٹ کے مطابق عدالتی حکم پر مقامی سول جج نوید خالق چوہدری نذیر احمد آرائیں کے زیر استعمال سرکاری جگہ کا معائنہ کے لیے گئے ہوئے تھے ان کی سیکورٹی پر مامور اے ایس آئی رانا عبدالستار جب سول جج کے ہمراہ موقع سے روانہ ہوئے تو دونوں گروپوں نے ایک دوسرے کے خلاف نعرہ بازی شروع ہو گئی چند ہی لمحوں بعد نذیر آرائیں گروپ کی طرف سے 20/25اور نذیر جٹ گروپ کی طرف سے 10/15اشخاص مسلح اسلحہ ،ڈنڈے سوٹے جھگڑناشروع کر دیا اور ایک دوسرے کو مار پیٹ کے علاوہ فائرنگ شروع کر دی جس کے نتیجہ میں ایک 14سالہ راہگیر شہباز ولد صفدر گولی لگنے سے شدید زخمی ہو گیا تھا ۔نذیر احمد آرائیں گروپ کے نامزد ملزموں اقلیتی ممبر ضلع کونسل وہاڑی نذیر رندھاوا ،افضال عرف بلاول آرائیں ،فرخ اسلام،جمیل شاہد کونسلر بلدیہ مجاہد کالونی ،ذوالفقار عرف زلفی ،شاہد کریم جبکہ نذیر جٹ گروپ کے نامزد ملزموں میں ان کے معتمد خاص ملک رمضان عرف بھانی لنگڑیال ،ملک ریاض احمد لنگڑیال ،حمزہ جٹ ،لالہ عارف مغل کونسلر بلدیہ بورے والا ،محمد جعفر گن مین ،محسن جٹ جو کہ چوہدری نذیر جٹ کے بھتیجے ہیں مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے

مزید : ملتان صفحہ آخر