’’ ڈیمز توہر حال میں بنانے ہیں، میں نے ان سب کو بلا کر اندر سے کنڈی لگا دینی ہے اور پھر۔ ۔ ۔‘‘ چیف جسٹس نے ایسی بات بتادی کہ ہرمحبت وطن پاکستانی انہیں داد دینے پر مجبور ہوجائے گا

’’ ڈیمز توہر حال میں بنانے ہیں، میں نے ان سب کو بلا کر اندر سے کنڈی لگا دینی ...
’’ ڈیمز توہر حال میں بنانے ہیں، میں نے ان سب کو بلا کر اندر سے کنڈی لگا دینی ہے اور پھر۔ ۔ ۔‘‘ چیف جسٹس نے ایسی بات بتادی کہ ہرمحبت وطن پاکستانی انہیں داد دینے پر مجبور ہوجائے گا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیف جسٹس پاکستان نے کالا باغ ڈیم کے تعمیر سے متعلق کیس میں ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈیم تو ہر حال میں بننا ہے، یہ بتائیں ڈیمز کن جگوں پر بنیں گے، چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ مجھے مسئلے کا حل بتائیں،مجھے بندے بتائیں ماہرین کے نام بتائیں، میں نے سب کو بلا کر اندر سے کنڈی لگا دینی ہے۔چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ کم از کم اس مسئلے پر گفت و شنید شروع کرنی چاہئے،ایک کمیٹی یا ٹیم تشکیل دینی پڑے گی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کالا باغ ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت کی، سابق چیئرمین واپڈا شمس الملک نے عدالت کو کالا باغ ڈیم سے متعلق بریفنگ دی۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ سیاسی حکومتوں نے دس سال میں ڈیمز کی تعمیر کےلئے کیا کیا، ڈیم تو ہر حال میں بننا ہے، یہ بتائیں ڈیمز کن جگوں پر بنیں گے، چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ مجھے مسئلے کا حل بتائیں،مجھے بندے بتائیں ماہرین کے نام بتائیں، میں نے سب کو بلا کر اندر سے کنڈی لگا دینی ہے۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ کم از کم اس مسئلے پر گفت و شنید شروع کرنی چاہئے،ایک کمیٹی یا ٹیم تشکیل دینی پڑے گی،چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ ہمیں ہنگامی اور جنگی بنیادوں پر کام کرنا ہوگا، لوگوں کو اکٹھا کریں تاکہ لوگوں کی تجاویز آئیں،چیف جسٹس نے کہا کہ جب تک مسئلے کا حل نہیں نکلتا میں نے جانے نہیں دینا،سب کو مل بیٹھ کر ایشو کے حل کےلئے سوچنا ہوگا،چیف جسٹس نے کہا کہ ڈیمزکی تعمیرکیلئے ہم سب فنڈزدیں گے،ڈیمز کی تعمیرکیلئے وکلابھی حصہ ڈالیں گے،انہوں نے کہا کہ آئندہ ہفتے کیس کی سماعت روزانہ کی بنیادپرکریں گے،عدالت نے کالاباغ ڈیم کیس کی سماعت ملتوی کردی گئی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد