دنیا کا شرمناک ترین بحری جہاز، اس کے اندر کیا کیا جاتا ہے؟ جان کر ہی انسان کا رنگ لال ہوجائے

دنیا کا شرمناک ترین بحری جہاز، اس کے اندر کیا کیا جاتا ہے؟ جان کر ہی انسان کا ...
دنیا کا شرمناک ترین بحری جہاز، اس کے اندر کیا کیا جاتا ہے؟ جان کر ہی انسان کا رنگ لال ہوجائے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

برلن(مانیٹرنگ ڈیسک) بحری جہاز سفر اور مال برداری کے لیے استعمال کیے جاتے ہیں لیکن دنیا میں ایک ایسا بحری جہاز بھی ہے جسے ایسے شرمناک ترین کام کے لیے استعمال کیا جاتا ہے کہ سن کر ہی آدمی کا رنگ لال ہو جائے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس جہاز کو پرتشدد جنسی عمل کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔ اس شرمناک کام کے خواہش مند افراد ہر سال اس جہاز میں سوار ہوتے ہیں اور کھلے پانیوں میں سفر کرتے ہیں اور کئی ممالک کے ساحل پر جاتے ہیں۔اس شرمناک کام کی مناسبت سے اس جہاز کو ”ٹارچر شپ“ (Torture Ship)کا نام دیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ جہاز گزشتہ 22سال سے ہر برس سفر کر رہا ہے۔ ان دنوں بھی یہ جہاز اپنے سفر پر ہے جو گزشتہ روز جرمنی کے ساحل پر پہنچا جہاں لوگ اس میں سوار لوگوں کو دیکھنے کے لیے امڈ پڑے۔ رواں سال اس جہاز میں 500سے زائد مردوخواتین سوار ہیں اور یہ جس ملک کے ساحل پر پہنچتا ہے وہاں سے بھی پرتشدد جنسی عمل کے خواہش مند مردوخواتین کو اس میں سوار ہونے کی اجازت ہوتی ہے۔ صرف انہیں جہاز کا کرایہ ادا کرنا ہوتا ہے جو 57پاﺅنڈ (تقریباً 9ہزار روپے) فی رات ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی