میر ے خلاف فیصلہ دینے والا جج کرپٹ ، مجھے گالی دیگا تو میں بھی دوں گا ،فیصلہ دیکر مسلم لیگ (ن) سے وفاداری کی سزادی گئی : شاہد خاقان عباسی کا تاحیات نااہلی کے فیصلے پر رد عمل

میر ے خلاف فیصلہ دینے والا جج کرپٹ ، مجھے گالی دیگا تو میں بھی دوں گا ،فیصلہ ...
میر ے خلاف فیصلہ دینے والا جج کرپٹ ، مجھے گالی دیگا تو میں بھی دوں گا ،فیصلہ دیکر مسلم لیگ (ن) سے وفاداری کی سزادی گئی : شاہد خاقان عباسی کا تاحیات نااہلی کے فیصلے پر رد عمل

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاہے کہ میرے خلاف تاحیات نااہلی کا فیصلہ دینے والا جج کرپٹ ہے ۔ یہ مجھ کو گالی دیگا تو میں بھی دوں گا ۔یہ فیصلہ کرکے مجھ کو مسلم لیگ (ن ) سے وفاداری کی سزادی گئی ۔یہ چیز یں الیکشن کو مشکوک بنا رہی ہیں۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”نقطہ نظر“ میں اپنے بارے الیکشن ٹربیونل کے تاحیات فیصلے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ مجھ کو مسلم لیگ ن سے وفاداری کی سزا دی گئی ہے ۔ یہ چیز یں الیکشن کو مشکوک بنا رہی ہیں۔ میں نے حلف نامہ دیا تھا اور کوئی ٹمپرنگ نہیں کی ۔ یہ کیا بات ہے کہ ٹمپرنگ ہوگئی ہے؟ ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے ملک کی اس جج سے زیادہ خدمت کی ہے اور میں منہ پر کہتا ہوں کہ یہ کرپٹ جج ہے ۔ انہوں نے کہا یہ جج مجھ سے خوفزدہ نہ ہو بلکہ قانون سے خوفزدہ ہواور جس کرسی پر وہ بیٹھے تھے اس سے خوفزدہ ہوں ۔ یہ مکان 1970میں بنایا گیا تھا جس پر لاگت 3لاکھ روپے آئی تھی بمعہ زمین کے ۔ انہوں نے کہا کہ جج نے میرے فیصلے میں پرسنل ریمارکس لکھے ہیں جس کا ان کو اختیار نہیں تھا ۔ یہ اپنے اختیار سے تجاوز کررہے ہیں اگر یہ گالی نکالیں گے تو میں بھی گالی نکالوں گا ۔ انہوں نے کہا کہ جج کے سوچ دیکھ لیں کہ ایک الیکشن پٹیشن کا فیصلہ کر رہے ہیں کسی کیس کا فیصلہ نہیں سنا رہے اور فیصلے میں شعر لکھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں اپیل دائر کروں گا اور اس جج کے خلاف جاﺅں گا ۔ انہوں نے کہا کہ جج کا رویہ جو ریٹرننگ آفیسر اور وکلا کے ساتھ تھا وہ ایک جج کا رویہ نہیں ہوتا اور بدقسمتی ہے کہ ایسے لوگ عدلیہ میں موجود ہیں۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی