اگر شدید گرمی میں آپ گاڑی کی ٹینکی مکمل فل کر دیں تو کیا اس کے پھٹنے کا خطرہ ہوتا ہے؟ جانئے وہ بات جو تمام ڈرائیوروں کو معلوم ہونی چاہیے

اگر شدید گرمی میں آپ گاڑی کی ٹینکی مکمل فل کر دیں تو کیا اس کے پھٹنے کا خطرہ ...
اگر شدید گرمی میں آپ گاڑی کی ٹینکی مکمل فل کر دیں تو کیا اس کے پھٹنے کا خطرہ ہوتا ہے؟ جانئے وہ بات جو تمام ڈرائیوروں کو معلوم ہونی چاہیے

  

بوسٹن(نیوز ڈیسک)شدید گرمی کے موسم میں اگر گاڑی کی ٹینکی پوری بھروا لی جائے تو کیا اس کے پھٹنے کا خطرہ بھی ہوتا ہے؟ آج کل سوشل میڈیا پر کچھ ایسی پوسٹس گردش کررہی ہیں جن میں شہریوں کو خبردار کیا گیا ہے کہ گرمی کے موسم میں فیول ٹینک کو پورا بھروانے سے ان کے ساتھ خوفناک حادثہ پیش آسکتا ہے، جس کے بعد یقینا آپ بھی جاننا چاہیں گے کہ اصل حقیقت کیا ہے۔ تو جناب مختصر بات یہ ہے کہ ماہرین کی رائے میں یہ بالکل احمقانہ بات ہے، بلکہ وہ تو یہ بھی کہتے ہیں کہ فیول ٹینک کو پورا ہی بھروانا چاہیے۔

’دی میٹرو‘ کے مطابق آٹو موبیل ٹیکنالوجی کے ماہر راڈ ڈینس نے اس بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ”ان فضول باتوں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ تمام گاڑیوں کے فیول سسٹمز کو اس طرح ڈیزائن کیا جاتا ہے کہ وہ ایندھن کے پھیلاﺅ اور اس میں سے نکلنے والے بخارات کے دباﺅ کو بآسانی برداشت کر سکتے ہیں۔ ٹینکی کو پورا بھروانے کی صورت میں اس کے پھٹنے کا ہرگز کوئی امکان نہیں ہوتااور شہریوں کو اس کے بارے میں پریشان نہیں ہونا چاہیے۔ اس کے برعکس اگر آپ لمبے سفر پر جارہے ہیں تو ایندھن ختم ہونے کے باعث شدید مسائل پیش آسکتے ہیں۔ تو میں یہی مشورہ دوں گا کہ فیول ٹینک کو پورا ہی بھروانا چاہیے اور شہریوں کو یہ بھی چاہیے کہ اس طرح کی بے بنیاد باتوں کو تصدیق کے بغیر آگے مت پھیلائیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس