حالات سے پریشان پاکستانیوں کیلئے ایک اور انتہائی خطرناک پیشگوئی آ گئی

حالات سے پریشان پاکستانیوں کیلئے ایک اور انتہائی خطرناک پیشگوئی آ گئی
حالات سے پریشان پاکستانیوں کیلئے ایک اور انتہائی خطرناک پیشگوئی آ گئی

  


نیویارک (ڈیلی پاکستان آن لائن )عالمی ریٹنگ کے ادارے فچ سیلوشن نے حالات سے تنگ پاکستانیوں کیلئے نہایت خطرناک پیشگوئی کر دی ہے اور کہاہے کہ پاکستان کی معاشی ترقی کی شرح کم ہوکر 2.7 فیصد تک آنے کا امکان ہے جبکہ آئی ایم ایف کے بیل آوٹ پیکج کے نتیجے میں سخت فیصلے کرنے ہوں گے ۔

غیر ملکی جریدے ” بلومبرگ“ کی رپورٹ کے مطابق عالمی ریٹنگ کے ادارے فچ سیلوشن نے پیشگوئی کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان کی رواں مالی سال معاشی ترقی کی شرح 4.4 فیصد سے کم ہو کر 3.2 فیصد جبکہ آئندہ مالی سال 2019-20 میں معاشی ترقی کی شرح 4 فیصد سے کم ہو کر 2.7 فیصد پر رہنے کا امکان ہے ۔

آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے بیل آوٹ پیکیج کے نتیجے میں مالی پالیسیوں کو سخت کرتے ہوئے مشکل فیصلے کرنے ہوں گے اور مشکل فیصلوں کی بدولت معاشی ترقی کی شرح بھی متاثر ہو گی ،

آئی ایم ایف کے معاہدے کے باعث سینٹرل بینک نے پالیسی ریٹ 150 بی پی ایس بڑھا دیا ہے ، حکومت کی جانب سے اس مقصد کے ساتھ آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش کیا گیا ہے کہ بنیادی خسارے کو 2019-20 میں 1.9 سے کم کرتے ہوئے 0.6 فیصد پر لایاجائے ۔

کھپت کی ترقی مالی سال 2018 کی 6.3 فیصدکی نسبت کم ہو کر مالی سال 2020 میں 5.3 فیصد پر آتی نظر آئے گی جیسا کہ عوام کی قوت خرید بھی کم ہونے کا امکان ہے ۔

فچ سیلوشن کا کہناتھا کہ اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہو گا تاہم سی پیک کے تحت سرمایہ کاری سے معیشت کو سہارا ملے گا اور آئندہ ماہ کے دوران درآمدات بڑھیں گی ۔

مزید : بزنس