شیر گڑھ،سسرالیوں کے ہاتھوں قتل ہونیوالی خاتون کے قاتل گرفتار

شیر گڑھ،سسرالیوں کے ہاتھوں قتل ہونیوالی خاتون کے قاتل گرفتار

  

شیرگڑھ(نامہ نگار) سسرالیوں کے ہاتھوں قتل ہونے والی خاتون کے ملزمان گرفتار آلہ قتل اور خاتون کے خون آلود کپڑے برآمد کچھ عرصہ پہلے مقتول خاتون کے شوہر ملزم شہزاد کی ماں قتل ہوئی تھی جس کی دعویداری انہوں نے اپنے سسر شاہ نواز پر کی تھی اور انہیں شک تھا کہ اس قتل میں میری بیوی بھی شامل تھی چونکہ اس وقت وہ حاملہ تھی اسی وجہ سے بعد میں قتل کیا ان خیالات کا اظہار ڈی ایس پی تخت بھائی بشیر خان یوسفزی نے اپنے دفتر میں پریس کانفرنس کے دوران کیا اس موقع پر ان کے ساتھ انوسٹی گیشن آفیسر شیرگڑھ قیوم خان بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ22جون کو شاہ نواز ولد دلاور خان سکنہ اپر دیر نے شیر گڑھ پولیس کو اپنے رپورٹ میں بتایا کہ میری بیٹی مسماۃکوثر بی بی کی شادی تقریباَ ایک سال پہلے مسمی شہزاد ولد فتح الرحمن سکنہ نور محمد بانڈہ شیرگڑھ کے ساتھ ہوئی تھی جس کا ایک20دن کا نو مولود بیٹا بھی ہے گذشتہ روز مجھے اطلاع ملی کہ میری بیٹی کو قتل کیا گیا ہے اور انہیں خفیہ طور پر دفنانے کی کوشش کر رہا ہے جب میں آکر دیکھا تو میری بیٹی کی قتل شدہ لاش کفن میں پڑی تھی پوری تصدیق کے بعد مجھے معلوم ہوا کہ میری بیٹی کو ملزمان فاتح الرحمن ولد محمد،گل شیر خان،نعمت خان،شہزاد خان پسران فاتح الرحمن ساکنان نور محمد بانڈہ نادر شیر کلے نے سابقہ قتل مقاتلہ کی دشمنی پر قتل کیا ہے ڈی ایس پی تخت بھائی نے بتایا کہ اس قتل پر ڈی پی او مردان ڈاکٹر زاہد اللہ خان نے سختی سے نوٹس لیا اور میری نگرانی میں ایس ایچ او شیرگڑھ عبد السلام خان اور انوسٹی گیشن آفیسر قیوم خان پر مشتمل تین رکنی کمیٹی بنایا اور ملزمان تک رسائی حاصل کرکے تین ملزمان فاتح الرحمن ولد محمد،گل شیر،نعمت خان پسران فاتح الرحمن کو گرفتار کرلیا جبکہ ملزم شہزاد کو بھی جلد گرفتار کیا جائیگا

مزید :

پشاورصفحہ آخر -