حکومت نے 2سال میں بڑے بڑے چیلنجز کا سامنا کیا: عبد العلیم خان

  حکومت نے 2سال میں بڑے بڑے چیلنجز کا سامنا کیا: عبد العلیم خان

  

لاہور(لیڈی رپورٹر) سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان نے وزیر اعظم عمران خان کے قومی اسمبلی کے خطاب کو اصل ملکی حقائق اور اُن کی انقلابی سوچ کا آئینہ دار قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ موجودہ حکومت نے گزشتہ2 برسوں میں اندرونی و بیرونی محاذ پر درپیش بڑے بڑے چیلنجز کا سامنا کیا، سابقہ حکومت کی کرپشن اور نا اہلی کے باعث اکٹھے ہونے والے مسائل کے حل کے ساتھ ساتھ ملک کو درست ٹریک پر ڈالنے کی کوشش کی گئی اورقرضوں کے بوجھ کو کم کرنے سمیت ایسے اہم انقلابی اقدامات کیے گئے جن کے نتائج سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں۔سینئر وزیر عبدالعلیم خان نے اپنے بیان میں کہا کہ عمران خان کی قیادت میں تحریک انصاف کی حکومت نے بالخصوص کورونا کی صورتحال کے محاذ پر ڈٹ کر مقابلہ کیا اور اس معاملے پر وزیر اعظم عمران خان کا موقف شروع دن سے ہی واضح اور انتہائی شفاف تھا جسے وقت نے بھی درست ثابت کیا۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ موجودہ حکومت نے تمام صوبوں کو مساوی حقوق دینے اور ساتھ لے کر چلنے کی کوشش کی ہے جبکہ وزیر اعظم عمران خان نے بلا امتیاز احتساب کے وعدے کو بھی عملی جامہ پہنایا ہے۔ عبدالعلیم خان نے مزید کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کی شخصیت پر عالمی طاقتوں سمیت دنیا بھر سے جس بھرپور اعتماد کا اظہار کیا گیا ہے اُس کے باعث پاکستان کو اقوام عالم میں پہلے سے کہیں بہتر پوزیشن حاصل ہوئی ہے اور خطے میں طاقت کے توازن سمیت پاکستان کی اہمیت میں اضافہ ہوا ہے۔ سینئر وزیر پنجاب نے کہا کہ وزیر اعظم کا قومی اسمبلی میں کیا گیا خطاب بھرپور، جامع اور آئندہ کے روڈ میپ کو واضح کرتا ہے کہ حکومتی پالیسیاں کن خطوط پر استوار ہونگی۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت پر اپوزیشن کی بے جاتنقید کو کہیں نہیں سنا گیا اور نہ ہی عوام نے اُن کی بے بنیاد باتوں پر کان دھرا ہے۔سینئر وزیر عبدالعلیم خان نے اس عزم کا اظہار کیا کہ انشاء اللہ موجودہ حکومت آنے والے دنوں میں اس سے بھی زیادہ کامیابیاں حاصل کرے گی اور وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں ملک کو کرپشن فری بنانے اور حقیقی معنوں میں تبدیلی لانے کا خواب ضرور شرمندہ تعبیر ہوگا۔

عبدالعلیم خان

مزید :

صفحہ آخر -