وزارت مذہبی امور کاحج محدود ہونے کے بعد واجبات کی واپسی کا فیصلہ

وزارت مذہبی امور کاحج محدود ہونے کے بعد واجبات کی واپسی کا فیصلہ

  

اسلام آباد(آن لائن) وزارتِ مذہبی امور نے حج 2020 کے درخواست گزاروں کو واجبات کی واپسی کا فیصلہ کر لیاہے،واجبات کی ادائیگی2جولائی سے شروع ہوگی تمام درخواست گزاروں کو بذریعہ ایس ایم ایس اطلاع دیدی گئی ہے،5ارب روپے کی خطیر رقم پر وزارت کو کروڑوں روپے کا فائدہ پہنچنے کا امکان ہے۔وزارت مذہبی امور کے ترجمان کے مطابق سعودی حکومت کی جانب سے حج 2020کے بارے میں حالیہ فیصلے کے روشنی میں وزارت نے تمام کامیاب عازمینِ حج کو رقوم واپسی کا سلسلہ شروع کرنے کا فیصلہ کیااورحج واجبات کی واپسی کا سلسلہ 2 جولائی سے ملک بھر کے نامزد بینکوں سے شروع ہو گا اور اس امر کی اطلاع تمام درخواست گزاروں کو بذریعہ ایس ایم ایس شروع کر دی گئی ہے۔ ترجمان کے مطابق حج واجبات کی نقد واپسی کیلئے درخواست گزار کا بینک آنا ضروری ہے واجبات بذریعہ بینکرز چیک لینے کیلئے صرف گروپ لیڈر کو تمام افراد کی اصل دستاویز کے ہمراہ بینک آنا ہو گا۔ واضح رہے کہ امسال 1لاکھ 7ہزار کے قریب درخواست گزاروں کو بذریعہ قرعہ اندازی سرکاری حج سکیم کے تحت کامیاب قرار دیا گیا تھا۔وزارت کے ذرائع کے مطابق امسال 5ارب روپے سے زائد کی رقم پر ملنے والے کروڑوں روپے کے منافع کو حج ویلفیئر فنڈ میں منتقل کردیا جائے گا۔

واپسی فیصلہ

مزید :

صفحہ آخر -