کے الیکٹرک نے کراچی کے شہریوں کی زندگی اجیرن بنا دی ہے، وقار مہدی

کے الیکٹرک نے کراچی کے شہریوں کی زندگی اجیرن بنا دی ہے، وقار مہدی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلزپارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی نے کے الیکٹرک کی جانب سے پورے کراچی شہر میں بلاجواز بدترین لوڈشیڈنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کراچی الیکٹرک نے کراچی کے شہریوں کی زندگی اجیرن بنا دی ہے 24 گھنٹے میں 18 18 گھنٹے کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے جبکہ بجلی کے بل ہوشربا اضافہ کے ساتھ عوام کو بل جمع کرنے پر مجبور کردیا گیا ہے آج کل کی اذیت ناک گرمی کے موسم میں کے الیکٹرک نے عوام کی زندگی کو جہنم بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کی نجکاری کے ذمیدار آمر جنرل مشرف اور اسکی اس وقت کی خاص حکومتی اتحادی ایم کیو ایم تھی اس وقت ایم کیو ایم جنرل مشرف کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہو کر نجکاری کی حمایت کررہی تھی جبکہ پاکستان پیپلزپارٹی نے کے الیکٹرک کی نجکاری کیخلاف بھرپور احتجاج کیا بھوک ہڑتالی کیمپ لگائے اور اس وقت آمرنہ حکومت کو باور کرایا تھا کہ کے الیکٹرک کی نجکاری کراچی کے شہریوں کے ساتھ ظلم ہوگا اور یہ نجکاری کراچی شہر کو اندھیروں میں ڈوبو دے گی اور آج پاکستان پیپلزپارٹی کا موقف درست ثابت ہو گیا ہے۔ آج ایم کیو ایم کے الیکٹرک کے خلاف احتجاج کرکے عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا ایم کیو ایم احتجاج ب کرنے سے پہلے اپنے گریبانوں میں جھانکے کہ کے الیکٹرک کی نجکاری کے نام پر کراچی کے شہریوں کی پیٹھ پر چھرا ایم کیو ایم نے ہی گھونپا تھا جس کا خمیازہ کراچی کے شہری لوڈشیڈنگ کی شکل میں بھگت رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نجکاری کے معاہدے کے تحت کے الیکٹرک نے کراچی کو بجلی کی بہتر سے بہتر فراہمی کے لئے کوئی خاطر خواہ سرمایہ کاری نہیں کی اور آج کراچی میں 700 سے زائد میگا واٹ بجلی کا شارٹ فال ہوگیا ہے لیکن اس ساری صورتحال پر وفاقی حکومت چین کی بانسری بجا کر سو رہی ہے اسکو کراچی میں جاری بدترین لوڈشیڈنگ اور کراچی کے مسائل سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کے الیکٹرک اپنا قبلہ درست کرے اور جاری لوڈشیڈنگ کا فل الفوار خاتمہ کیا جائے اور کراچی کے شہریوں کو بجلی کی مسلسل فراہمی یقینی بنائی جائے۔

مزید :

صفحہ آخر -