تفریحی پروگرامات دیگر امور پر پابندی عائد کردی گئی، کامران بنگش

  تفریحی پروگرامات دیگر امور پر پابندی عائد کردی گئی، کامران بنگش

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا میں تحصیل میونسپل انتظامیہ کے مالی امور میں بچت و کفایت شعاری کو یقینی بنانے کے لئے محکمہ بلدیات نے احکامات جاری کر دئیے ہے۔ جاری احکامات کی تفصیلات پر بات کرتے ہوئے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے بلدیات کامران بنگش نے کہاہے کہ ٹی ایم ایز کے بے قابو غیرترقیاتی اخراجات ہمیشہ بجٹ خسارے کا سبب بنے اسی لئے غیرترقیاتی اخراجات کی وجہ سے ہمیشہ محکمہ خزانہ کی گرانٹس پر انحصار کرنا پڑتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یوٹیلیٹی بلز، انٹرنیٹ اور سفری و ڈیوٹی الاونس پر30 فیصد کٹ لگایا گیا۔ جبکہ خسارے کی شکار ٹی ایم ایز میں نئی بھرتیوں اور نئی آسامی پیداکرنے پر بھی مکمل پابندی عائدکردی گئی ہے۔ معاون خصوصی بلدیات نے تحصیل میونسپل انتظامیہ میں نئی تقرری اور خالی آسامیوں کے حوالے سے کہا کہ نئی تقرری اور خالی آسامی پر بھرتی کے لئے لوکل کونسل بورڈ سے اجازت لینا لازمی قرار دیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ تمام ٹی ایم ایز کو فیول کارڈ استعمال کرنے کا پابند بنا دیا گیا ہے۔ تاکہ اسی طرح پٹرول و دیگر اخراجات کو ڈیجیٹلائز کیا جا سکے۔ جن ٹی ایم ایز کی حدود میں پاکستان سٹیٹ آئل کے پمپس نہیں ہیں تو وہ کسی نجی پمپ سے فیول کارڈ بنوانے کے پابند ہیں۔ تحصیل میونسپل انتظامیہ کی سطح پر گاڑیوں کے استعمال کو مزید کفایت شعار بنانے پر بات کرتے ہوئے معاون خصوصی برائے لوکل گورنمنٹ کامران بنگش نے کہا کہ ٹی ایم اے اپنی حدود سے باہر گاڑی استعمال نہیں کرسکیں گے جبکہ دفتری ایام میں طے شدہ آفیشل ملاقات کے لئے ٹی ایم اے گاڑی اپنی حدود سے باہر لے جا سکتے ہیں۔معاون بلدیات کامران بنگش نے احتساب بارے اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ کوئی یہ نہ سمجھیں کہ متعلقہ احکامات پر بوگس طریقے سے عملدرآمد ہو گا، آئندہ لوکل کونسل بورڈ بے قابو اخراجات والی ٹی ایم ایز کا فارنزک آڈٹ کروائے گا۔ تاکہ احتساب کا عمل شفاف ہو اور عوامی اثاثہ جات محفوظ ہوں۔خیبرپختونخوا کے نئے اضلاع کے حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئے معاون خصوصی نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کے علاوہ دیگر اضلاع کے ٹی ایم ایز کوئی نئی گاڑی نہیں خرید سکیں گی۔ جبکہ کسی غیر مجاز ملازم کو گاڑی استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ انہوں نے مزید واضح کیا کہ کسی بھی ھیرپھیر یا متعلقہ احکامات کی روگردانی کا ذمہ دار متعلقہ ٹی ایم او ہوگا۔تحصیل میونسپل انتظامیہ میں گاڑیوں اور اس سے متعلقہ کفایت شعاری کے حوالے سے بات کرتے ہوئے معاون بلدیات نے واضح کیا کہ اعلامیہ میں لکھا گیا ہے پول ڈیوٹی کے لئے مختص گاڑیوں میں سے صرف مجاز آفیسرز گاڑی لے جاسکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ سال2020-21 کے لئے کوئی فکسڈ تنخواہ یا کسی اور کی خدمات کے لئے نہیں لی جائیں گی۔غیرضروری پوسٹوں کی نشاندہی کرکے انہیں ختم کر رہے ہیں۔ کسی بھی دیگر یا متفرق اخراجات کو ختم کیا گیا ہے۔گرمیوں میں اے سی کے استعمال کو کم کرنے سے متعلق اعلامیہ کا حوالہ دیتے ہوئے کامران بنگش نے کہا کہ دفاتر میں اے سی کا استعمال محدود کرکے صرف مجاز ملازمین استعمال کر سکیں گے۔ بجلی بچت کے سلسلے میں اے سی صرف 26 ڈگری سینٹی گریڈ پر رکھا جائے گا۔ جبکہ ٹی ایم او اپنے دفاتر میں غیرمجاز ملازمین کے دفاتر سے اے سی کنکشن ہٹا دیں۔اعلامیہ کی مزید تفصیلات بتاتے ہوئے معاون موصوف نے کہا کہ اب مالی طور پر کمزور ٹی ایم اے سالانہ بجٹ میں ہاوسنگ سکیم کے لئے فنڈز مختص نہیں کر سکتیں مزید یہ کہ تفریحی اخراجات یعنی کراکری وغیرہ کی خرید پر مکمل پابندی لگائی گئی ہے۔ملازمین کو ملنے والی اعزازئیے کے متعلق انہوں نے کہا کہ کسی بھی قسم کا اعزازیہ کسی بھی ملازم کو نہیں دیا جائے گا۔مثالی کارکردگی کی بنیاد پر لوکل کونسل بورڈ اعزازیے کی منظوری دے سکتی ہے۔ عارضی طور پر کام کا بوجھ بڑھنا سے کسی بھی ملازم کو اوور ٹائم کا اہل نہیں بناسکتا۔ کامران بنگش نے کہاتحصیل میونسپل انتظامیہ کی جانب سے مالی لین دین کے لئے کھلے چیک دینے پر بھی مکمل پابندی لگائی گئی ہے۔ کوئی بھی ٹی ایم اے صرف دس ہزار کا معمولی کیش رکھ سکتی ہے۔ کابینہ فیصلے کی روشنی میں تحصیل میونسپل انتظامیہ کسی بھی ورکشاپ یا سیمینار کا انعقاد نہیں کر پائے گی۔کفایت شعاری احکامات پر عمل درآمد نہ ہونے کی صورت میں کامران بنگش نے کہا کہ کفایت شعاری احکامات پر عملدرآمد نہ کرنے کی صورت میں متعلقہ ٹی ایم او کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مزید :

صفحہ اول -