اقوام متحدہ کی گاڑی میں مرد اور عورت کی شرمناک ترین حرکت،عالمی ادارہ صدمے میں

اقوام متحدہ کی گاڑی میں مرد اور عورت کی شرمناک ترین حرکت،عالمی ادارہ صدمے میں
اقوام متحدہ کی گاڑی میں مرد اور عورت کی شرمناک ترین حرکت،عالمی ادارہ صدمے میں

  

جنیوا(ڈیلی پاکستان آن لائن)اقوام متحدہ کی گاڑی میں بیچ بازار جنسی تعلق پر مبنی ایک ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہو گئی ہے جس میں عالمی ادارے کی گاڑی میں ایک خاتون اور مرد کو شرمناک حرکات کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔

ٹائمز آف اسرائیل کے مطابق عالمی ادارے نے کہا ہے کہ اس نے اس ویڈیو کا نوٹس لے لیا ہے اور اس حوالے تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی یہ ویڈیو مبینہ طور پر تل ابیب کے ساحل کے قریب ایک مرکزی سڑک پر فلمائی گئی تھی۔

اٹھارہ سیکنڈ کی  یہ ویڈیو جمعہ کو منظر عام پر آئی جس میں  دیکھا جاسکتا ہے کہ سرخ لباس پہنے ایک خاتون گاڑی میں سوار مرد کے ساتھ اخلاق باختہ حرکات کررہی ہیں۔ 

گاڑی میں صرف ایک پی شخص موجود نہیں ہے بلکہ  ڈرائیور کے علاوہ ساتھ والی نشست پر ایک شخص کو سوئے ہوئے بھی دیکھا جاسکتا ہے البتہ ویڈیو میں ڈرائیور کی شکل نظر نہیں آئی۔

دوسری جانب اقوامِ متحدہ کا کہنا ہے کہ وہ اسرائیل میں اپنے ادارے کی ایک گاڑی میں مبینہ طور پرجنسی تعلق  کی ویڈیو پر 'صدمے اور شدید اضطراب' کے شکار ہیں۔

اقوامِ متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گتیریس کے ترجمان سٹیفان ڈوجاریک نے 18 سیکنڈ کی اس ویڈیو میں نظر آنے والے رویے کو قابلِ نفرت قرار دیا ہے۔

بی بی سی سے بات کرتے ہوئے انھوں نے جمعے کو کہا کہ ایسا رویہ 'ہر اس چیز کے خلاف ہے جو ہم اقوامِ متحدہ کے عملے کے غلط رویوں کو روکنے کے لیے کر رہے ہیں۔'

جب ان سے پوچھا گیا کہ  کیااس تعلق میں پیسوں کا لین دین شامل تھا، تو انھوں نے کہا کہ اس حوالے سے تفتیش جاری ہے اور یہ سوالات اس کا حصہ ہیں۔

اقوامِ متحدہ کی جنسی مِس کنڈکٹ کے خلاف پالیسیاں سخت ہیں۔

اگر ادارے کے کسی اہلکار کو ان ضوابط کی خلاف ورزی کا مرتکب پایا جائے تو انھیں انضباطی کارروائی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، ملک سے نکالا جا سکتا ہے اور اُن کی اقوامِ متحدہ کے امن مشنز میں شمولیت پر پابندی عائد کی جا سکتی ہے۔ تاہم یہ ان کے اپنے ملک کی ذمہ داری ہے کہ وہ ان کے خلاف مزید انضباطی یا قانونی کارروائی کریں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -