پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ،وفاقی وزیر عمر ایوب نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ سر پیٹ کر رہ جائیں گے

پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ،وفاقی وزیر عمر ایوب نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ سر ...
پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ،وفاقی وزیر عمر ایوب نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ سر پیٹ کر رہ جائیں گے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب خان نے کہا ہے کہ عالمی مارکیٹ کے حساب سے پاکستان میں پٹرول اب بھی سستا ہے، عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 112 فیصد اضافہ ہوا، بنگلا دیش، بھارت اور دیگر ممالک کی نسبت پاکستان میں پیٹرول آج بھی سستا ہے،جنوری میں پٹرول کی قیمت 116 روپے تھی، پٹرول کی قیمت جنوری کے مقابلے میں اب بھی 16 روپے فی لیٹر کم ہے، حکومت نے بجلی کے ترسیلی نظام کو ترقی دی، اس وقت ترسیلی نظام کی صلاحیت 26 ہزار میگاواٹ سے زائد ہے۔

قومی اسمبلی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق پالیسی بیان دیتے ہوئےوفاقی  وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات پر ہمارے اپنے وسائل نہیں ہیں، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی منڈی کے مطابق طے ہوتی ہیں، عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمت میں 112 فیصد اضافہ ہوا، عالمی مارکیٹ کے حساب سے تیل کی قیمتوں میں کم اضافہ کیا، مجموعی طور پر ابھی تک بین الاقوامی سطح پر تیل کی 48 فیصد قیمتیں بڑھیں، حالیہ قیمتوں میں اضافے کے باوجود برصغیر اور جنوبی ایشیا میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں پاکستان میں کم ہیں،یکم جنوری کو پیٹرول 116 روپے سات پیسے تھا اور پٹرولیم مصنوعات میں کمی کی تھی،جنوری کے مقابلے میں اس وقت بھی 17 روپے فی لیٹر کم اور ڈیزل 26 روپے فی لٹر کم ہے،پاکستان میں 100 روپے لیٹر، بنگلہ دیش، چین میں 138 روپے لیٹریا اس سے زائد ہے جبکہ جاپان، فلپائن جیسے ممالک میں بھی زیادہ ہے،انہوں نے کہا کہ جیسے ہی بین الاقوامی منڈی میں قیمتیں کم ہوئیں ہم نے کم کردیں،ہم نے پٹرولیم مصنوعات پر کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا،ہماری حکومت اس بات پر یقین رکھتی ہے اتار چڑھاؤ کے ساتھ چلا جائے گا،سابق حکومتیں ونڈ فال اپنے پاس رکھتے تھے، ہم اس پالیسی کے خلاف ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کلین اور گرین انرجی حکومت کی ترجیح ہے،گزشتہ حکومت نے مہنگے ذرائع سے بجلی پیدا کی،ہم قابل تجدید ذرائع سے بجلی پیداوار کو ترجیح دے رہے ہیں،پوائنٹ سکورنگ ضرور کریں ہم حقائق عوام کے سامنے رکھیں گے،گزشتہ ادوار میں اپنی ساکھ بنانے کیلئے 24 ارب روپے جھونک کر پٹرول قیمت کم کی گئی۔انہوں نے کہا کہ2014 میں مسلم لیگ (ن)کی حکومت تھی،اس وقت پیٹرول کی قیمت 31 فیصد ایک ماہ میں بڑھی تھی،پیٹرول پر تاریخی ٹیکس لگے ہوئے تھے،یہ مافیا کی بات کرتے ہیں،مافیا کا تحفظ ان لوگوں نے کیا،آج عمران خان کہتے ہیں کہ تحقیقات کریں اور لوگوں کو کیفر کردار تک پہنچاؤ۔

مزید :

قومی -