گرل فرینڈ کا ریپ کرنے والے 2لڑکوں پر نوجوان کا حملہ، لیکن پھر لڑکی نے سچ بتایا تو پچھتاوے میں خود کشی کرلی

گرل فرینڈ کا ریپ کرنے والے 2لڑکوں پر نوجوان کا حملہ، لیکن پھر لڑکی نے سچ بتایا ...
گرل فرینڈ کا ریپ کرنے والے 2لڑکوں پر نوجوان کا حملہ، لیکن پھر لڑکی نے سچ بتایا تو پچھتاوے میں خود کشی کرلی

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس میں گرل فرینڈ کا ریپ کرنے والے 2لڑکوں کو نوجوان نے چاقو کے وار کرکے قتل کر دیا لیکن یہ کام کرنے کے بعد جب اپنی گرل فرینڈ کے پاس گیا تو اس نے ایسی بات کہہ دی کہ پچھتاوے میں نوجوان نے سر میں گولی مار کر خودکشی کر لی۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اومسک میں 26سالہ رسلن لیبدیو نامی اس نوجوان کو اس کی گرل فرینڈ اینا نے بتایا کہ اسے 17سالہ میگزم کیبیبولین اور 16سالہ الیگزینڈر رین نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔

یہ سن کر رسلن نے چاقو لیا اور ان نوجوانوں کے پاس جا کر ان پر اس سے وار کر دیئے اورانہیں موت کے گھاٹ اتار دیا۔ واپس آ کر رسلن نے اینا کو بتایا کہ اس نے اس کے ساتھ ہونے والی جنسی زیادتی کا بدلہ لے لیا ہے۔ یہ سن کر اینا آنکھوں میں آنسو بھر کر بولی کہ ان دونوں نے تو اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی ہی نہیں تھی اور یہ کہ اس نے تو رسلن کو آزمانے کے لیے یہ جھوٹی کہانی گھڑی تھی۔ یہ سن کر رسلن پچھتاوے کی آگ میں چلنے لگا اور اگلے روز اس کی قریبی جنگل سے لاش مل گئی۔ اس کے سر میں گولی لگی ہوئی تھی۔ پولیس کو اس کی لاش کے قریب سے پستول بھی مل گیا جس سے اس نے خود کو گولی ماری تھی۔ پولیس اس دہرے قتل اور خودکشی کی واردات کی تفتیش کر رہی ہے اور اینا کو بھی شامل تفتیش کر لیا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -