" میں نے 4 گنا تنخواہ پر سعودی ایئر لائن جوائن نہیں کی" وائٹل سائنز اور جنون گروپ کا حصہ رہنے والے نصرت حسین نے پاکستانی پائلٹ کی ایسی کہانی سنادی کہ آپ کی آنکھوں میں بھی آنسو آجائیں

" میں نے 4 گنا تنخواہ پر سعودی ایئر لائن جوائن نہیں کی" وائٹل سائنز اور جنون ...

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) حکومت کی جانب سے پائلٹس کی ڈگریاں اور لائسنس مشکوک قرار دیے جانے اور انہیں گراونڈ کیے جانے کے بعد پائلٹس کے کیریئر داو پر لگ چکے ہیں، حکومت کی جاری کی گئی فہرست میں ایسے لوگوں کے نام بھی شامل کردیے گئے ہیں جو میرٹ پر پائلٹ بنے ہیں، ایسی ہی ایک کہانی جنون گروپ اور وائٹل سائنز کا حصہ رہنے والے پاکستانی پائلٹ نصرت حسین نے سنائی ہے۔

موسیقار و پائلٹ نصرت حسین کے مطابق انہوں نے حکومت کی مشکوک پائلٹس کی فہرست میں شامل اپنے ایک سابق کولیگ کو میسج کیا ، اس کی پریشانی دیکھ کر میری آنکھوں میں آنسو آگئے۔ بہت سے ایماندار لوگوں کے ساتھ زیادتی کی گئی ہے اور یہ حکومت کے منہ پر کالک ہے۔

نصرت حسین نے ساتھی پائلٹ کی کہانی سناتے ہوئے کہا " میری ساری محنت اور 2 بار سعودی ایئر لائن کو جوائن نہ کرنے کا خمیازہ اس طرح کی بدنامی کی صورت بھگتنا پڑ رہا ہے، سعودی عرب میں مجھے چار گنا تنخواہ مل رہی تھی لیکن میں اپنے ملک کے خوبصورت شمالی علاقوں کے اوپر پرواز کرنا چاہتا تھا ، اسی دھن میں میں نے اپنا اے ٹی پی ایل لائسنس ایک سال کے عرصے میں حاصل کرلیا۔"

متاثرہ پائلٹ کے مطابق اس کے پاس ایم بی اے اور ایک سال کے لاء کی ڈگری ہے، حکومتی لسٹ کے مطابق میں نے ایک ساتھ 5 پیپر دیے اور پھر اچانک میں نے 3 میں بے ایمانی کی، میرا پی آئی اے میں ریکارڈ بہت ہی شفاف ہے۔ میں خود کو صاف کرنے کیلئے ہر حد تک جاوں گا اور باقی لوگ بھی ایسا ہی کریں گے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -