حریت رہنماء غلام محمد خان سوپوری کے اہل خانہ کا کٹھ پتلی وزیرا علیٰ سے سربمہر مکان حوالے کرنے کا مطالبہ

حریت رہنماء غلام محمد خان سوپوری کے اہل خانہ کا کٹھ پتلی وزیرا علیٰ سے سربمہر ...

 سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں جموں وکشمیر پیپلز لیگ کے چیئرمین اور حریت رہنماء غلام محمد خان سوپوری کے اہل خانہ نے کٹھ پتلی وزیرا علیٰ مفتی محمد سعید پر زوردیا ہے کہ وہ حریت رہنما کے سربمہرکئے گئے مکان کوورثاکے حوالے کریں ۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق حریت رہنماء کے اہل خانہ نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ پولیس نے مبینہ طور پر جھوٹے اور بے بنیاد مقدمے کو بنیاد بناکر 30جون 2012کوچھانہ پورہ سرینگر میں ان کے مکان کوسربمہر کردیاتھا۔انہوں نے کہاکہ کٹھ پتلی انتظامیہ کو حریت رہنماء کے سیاسی نظریات سے تو اختلاف ہو سکتا ہے مگر اس کی سزا انکے اہلخانہ کو نہیں دی جانی چاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ آج تک نہ توپولیس اور نہ ہی کٹھ پتلی انتظامیہ غلام سوپوری کے خلاف کوئی بھی ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہی ہے اور ہم گذشتہ3برس سے دردر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں۔انہوں نے کہاکہ سابقہ کٹھ پتلی انتظامیہ نے نام نہاد اسمبلی میں یقین دہانی کرائی تھی کہ غلام محمد خان سوپوری کے اہلخانہ کو ان کا مکان واپس کیا جائے گامگر یہ یقین دہانی اعلان تک ہی محدود رہی۔حریت رہنماء کے اہل خانہ نے انسانی حقوق کی بین الاقوامی اور مقامی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ انکے ضبط کئے گئے مکان کو انہیں واپس دلوانے کیلئے اپنا اثرورسوخ استعمال کریں۔

مزید : عالمی منظر