پنجاب بھر میں کسانوں کی گرفتاریاں قابل مذمت اور بلا جوازہیں،میاں مقصود

پنجاب بھر میں کسانوں کی گرفتاریاں قابل مذمت اور بلا جوازہیں،میاں مقصود

لاہور(نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی لاہور میاں مقصود احمد نے کہا ہے کہ لاہور اور پنجاب بھر میں کسانوں کی گرفتاریاں قابل مذمت اور بلا جواز ہیں گرفتاریوں کا یہ سلسلہ فی الفور بند کیا جائے اوران کے جائز مطالبات کو تسلیم کیا جائے ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گذشتہ روز اپنے بیان میں کیا انھوں نے کہاکہ زراعت ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔ ماضی کی حکومتیں اور اب موجودہ حکومت بھی زراعت جیسے اہم شعبے کو نظر انداز کر رہی ہے۔ گذشتہ روز لاہور پریس کلب کے باہر کسانوں پرتشدد اورگرفتاریاں افسوسناک امر ہے، ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ حکومت کسانوں کے مسائل فوری طور حل کرنے کا اعلان کرتی، تاکہ زراعت کا شعبہ مزید مستحکم ہوتا مگر دکھ کی بات ہے کہ حکمرانوں کو اپنے اللوں اور تللوں سے ہی فرصت نہیں ملتی، انہیں عوامی مسائل سے کیا دلچسپی ؟انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کسان دشمن پالیسیوں کو ترک کر کے ان کسانوں کے جائز مطالبات کو تسلیم کرے اور ان کی تمام سہولتیں اور مراعات بحال کرے ۔کسانوں کے ساتھ حکمرانوں کی ناانصافی ملک کو معاشی طور پر کمزور کرنے کی سازش ہے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے 75فیصد سے زائد لوگوں کا تعلق اس شعبہ سے وابسطہ ہے اس کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کرنا اپنے ملک کی معیشت کا پہیہ روکنے کے مترادف ہے لہذا حکومت اپنی ناقص زرعی پالیسوں سے باز رہے تاکہ ملکی حالات مزید تباہی وبربادی سے بچ سکیں،کسان خوشحال ہونے کے بجائے بد حال ہو رہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ لاہور سے گرفتار تمام کسانوں اور کارکنوں کوفی الفور رہا کیا جائے اور ان پر قائم مقدمات کو واپس لیا جائے اور اس واقعہ کے ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کی جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1