ہمیں صاف پانی کی فراہمی کیلئے اجتماعی اقدامات کی ضرورت ہے ،خرم منظور

ہمیں صاف پانی کی فراہمی کیلئے اجتماعی اقدامات کی ضرورت ہے ،خرم منظور

 لاہور( نمائندہ خصوصی) زندگی اور صحت کو برقرار رکھنے کیلئے ہوا کے بعد سے ضروری چیز پانی ہے تندرستی کو قائم رکھنے کیلئے ہمیں پاک و صاف ہوا کی طرح خالص اور پاکیزہ پانی کی بھی ضرورت ہوتی ہے جس طرح غلیظ ہوا میں سانس لینے سے ہم بیمار پڑجاتے ہیں اسی طرح گند اور کشف پانی پینے سے بھی ہماری تندرستی بگڑ جاتی ہے معدے اور آنتوں کی مختلف بیماریاں جنم لیتی ہیں خالص اور پاکیزہ پانی بقائے حیات کیلئے نہایت ضروری ہے لہٰذا ضرورت آج اس امر کی ہے کہ ہم سب کو مل کر صاف پانی کی فراہمی کیلئے اجتماعی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ان خیالات کااظہار پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنماء خرم جہانگیر وٹو نے گزشتہ روز صاف پانی کی فراہمی اور حکومتی اقدامات بارے منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا سیمینار کا انعقاد آواز فاؤنڈیشن کی جانب سے کیا گیا تھا سیمینار میں محترمہ زیب النساء اعوان رکن پنجاب اسمبلی ن لیگ ،محترمہ نجمہ بیگم رکن پنجاب اسمبلی ن لیگ ،اعجاز شفیع رکن پنجاب اسمبلی ن لیگ ،آواز فاؤنڈیشن کے تراب علی ،شازیہ نواز،آغاز فاؤنڈیشن کے ظفر ملک ،عبداللہ ،مسز ملک ،پنجاب یونیورسٹی سوشل ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کے طلباء وطالبات سمیت مختلف این جی اوز کے نمائندوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی خرم جہانگیر وٹو نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ حکومت کو چاہئے کہ وہ صوبے بھر میں پانی کی فراہمی کیلئے خصوصی اقدامات کرے تاکہ عوام کو صاف پانی مہیا کیا جائے اور بیماریوں کا تدارک ہو سکے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ایم پی اے محترمہ زیب النساء اعوان اور محترمہ نجمہ بیگم نے کہا کہ حکومت پنجاب وزیراعلیٰ پنجاب کے ویژن کے مطابق عوام کو صاف پانی کی فراہمی کیلئے انتہائی بہترین اقدامات اٹھا رہی ہے اور اسی سلسلے میں واسا پورے شہر اور پنجاب بھر میں پانی کی بوسیدہ لائنوں کو تبدیل کرکے نئی پائپ لائن بچھائی جا رہی ہیں تاکہ عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم ہو سکے اسی طرح صوبے بھر کے ہسپتالوں اور تعلیمی اداروں میں صاف پانی کی فراہمی کیلئے واٹر فلٹر پلانٹ لگائے جا رہے ہیں تاکہ بیماریوں سے بچاؤ کیلئے اقدامات کئے جاسکے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے آواز فاؤنڈیشن کے تراب علی نے صوبے بھر میں صاف پانی کی صورتحال بارے شرکاء کو تفصیل سے بریفنگ دی اور بتایا کہ اس وقت صوبے بھر اور خاص طور پر جنوبی پنجاب میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے اقدامات کی اشد ضرورت ہے کیونکہ صاف پانی نہ ہونے کی وجہ سے عوام بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں لہٰذا حکومت کوچاہئے کہ وہ اپنی ترجیحات میں صاف پانی کی فراہمی کو شامل کرے تاکہ عوام کی مشکلات میں کمی آسکے سیمینار میں عاطف حسن نے صاف پانی کی فراہمی اور اقدامات اٹھانے کے حوالے سے اپنی پزیرٹیشن پیش کی جس میں انہوں نے بتایا کہ اگر دیکھا جائے تو صاف پانی انسانی صحت کیلئے نہایت اہم ہے اور صاف پانی نہ ہونے کی وجہ سے بیماریاں جنم لے رہی ہیں صاف پانی کے بارے میں آگاہی پیدا کرنے کیلئے عوام کو معلومات پہنچائی جاتی ہیں بہت ساری بیماریاں پھیلنے کی وجوہات صاف پانی کی فراہمی نہ ہونا ہے جس میں ڈائریا جیسی موذی بیماریاں پھیل رہی ہیں پاکستان میں تقریبا 100 سے 107 بچے صاف پانی مہیا نہ ہونے کی وجہ سے ہلاک ہو رہے ہیں اور تقریبا 27000 افراد ڈائریا اور دیگر بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں صاف پانی کی فراہمی نہ ہونے سے صحت کے بہت سارے مسائل جنم لے رہے ہیں اور اگر دیکھا جائے تو باقی صوبوں کی نسبت صوبہ پنجاب میں صاف پانی کی فراہمی کیلئے حکومتی اقدامات تسلی بخش ہیں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1