پروفیسر محمد اقبال نے نادر مخطوطات اورکتابیں پنجاب یونیورسٹی لائبریری کو وقف کر دیں

پروفیسر محمد اقبال نے نادر مخطوطات اورکتابیں پنجاب یونیورسٹی لائبریری کو ...

 لاہور (ایجوکیشن رپورٹر) معروف مورخ، محقق، مصنف اور گورنمنٹ اسلامیہ کالج سول لائنز کے سابق چئیرمین شعبہ تاریخ پروفیسر محمد اقبال مجددی نے کروڑوں روپے مالیت کے سینکڑوں سال پرانے نادر مخطوطات اور ہزاروں کتابیں نئی نسل کے لئے پنجاب یونیورسٹی لائبریری کو وقف کر دیں۔ اس سلسلے میں افتتاح تقریب پنجاب یونیورسٹی لائبریری میں منعقد ہوئی جس میں وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مجاہد کامران، پروفیسر ایمریطس پروفیسر ڈاکٹر سید اکرم شاہ، پروفیسر ڈاکٹر ظہور احمد اظہر، پروفیسر ڈاکٹر خورشید احمد رضوی، پروفیسر ڈاکٹر مظہر محمود شیرازی، چیف لائبریرین حسیب احمد پراچہ ، ڈپٹی چیف لائبریرین حامد علی ، علوم شرقیہ سے تعلق رکھنے والے نامور محققین اور طلباء و طالبات نے شرکت کی۔ پروفیسر محمد اقبال مجددی کی جانب سے عطیہ کئے گئے کروڑوں روپے مالیت کے کتب کے ذخیرے میں ایک ہزار سے زائد نادر مخطوطات کی عکسیات اور 10 ہزار 5 سو سے زائد کتب و رسائل شامل ہیں۔ مخطوطات میں 8 ویں صدی ہجری کا قدیم ترین مخطوطہ کنزالعباد فی شرح الاوراد (خواجہ بہاوٗالدین زکریا ملتانی )جس کی کتابت ثمرقند میں ہوئی، شامل ہیں۔    قلمی مخطوطات میں مسجد وزیر خان سے متعلق ابتدائی خط و کتابت اور شاہی فرامین بھی شامل ہیں جبکہ شاہی القابات سے متعلق دنیا کے واحد خطی نسخے اور کئی منفرد واحد مخطوطات اس خزانے میں شامل ہیں۔ جبکہ کئی مخطوطات میں لاہور شہر سے متعلق منفرد اور قیمتی معلومات موجود ہیں۔پروفیسر محمد اقبال مجددی نے کتب کا یہ خزانہ دنیا کے مختلف ممالک سے اکٹھا کیا۔ افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر مجاہد کامران نے نادر ذخیرہ کتب یونیورسٹی لائبریری کو وقف کرنے پر پروفیسر محمد اقبال مجددی کاشکریہ اداکرتے ہوئے ان کے حوصلے کو خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ کتاب بینی کو فروغ دینا ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے پروفیسر محمد اقبال مجددی کی جانب سے وقف کئے گئے علم کے خزانے سے آنے والی نسلیں مستفید ہوں گی۔ چیف لائبریرین حسیب پراچہ نے کہا کہ پروفیسر محمد اقبال مجددی کی جانب سے وقف کئے گئے عطیے کو محفوظ بنانے کے لئے وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران کی جانب سے فنڈز فراہم کئے گئے ہیں اور مخطوطات کے کیٹلاگ تیار کر لئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اہم کتب اور مخطوطات کو ڈیجیٹل شکل میں بھی ڈھالا جائے گا جو محققین کے لئے فائدہ مند ہوں گے۔ اس موقع پر مختلف تعلیمی شخصیات نے پروفیسر محمد اقبال کو نادر ذخیرہ کتب عطیہ کرنے پر خراج تحسین پیش کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4