پنجاب بھر میں پراپرٹی ٹیکس کے کمپیوٹر ائزڈ یمانڈ نوٹس تیار کرنیکا تجربہ ناکام ہو گیا

پنجاب بھر میں پراپرٹی ٹیکس کے کمپیوٹر ائزڈ یمانڈ نوٹس تیار کرنیکا تجربہ ...

لاہور(شہباز اکمل جندران،انوسٹی گیشن سیل) پنجاب میں پراپرٹی ٹیکس کے کمپیوٹرائزڈ ڈیمانڈ نوٹس تیار کرنے کا تجربہ ناکام ہوگیا۔ایکسائز اینڈٹیکسیشن اور اربن یونٹ کے اس مشترکہ منصوبے میں کمپیوٹر ائزڈ اور مینوئل ڈیمانڈمیں اکثر اوقات واضح فرق پایا جانے لگا ہے۔ڈی جی ایکسائز اینڈٹیکسیشن پنجاب نے صوبے کے تمام ڈائریکٹروں کو الگ الگ نتیجے کی حامل جائیدادوں کی کمپیوٹرائزڈ اور مینوئل ڈیمانڈ کا معائنہ کرنے کے بعد پائی جانے والی خامی کے متعلق ہیڈ آفس اور اربن یونٹ کو رپورٹ کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔معلوم ہواہے کہ محکمہ ایکسائز اینڈٹیکسیشن پنجاب اور پنجاب اربن یونٹ کا پراپرٹی ٹیکس کے تشخص کے حوالے سے مشترکہ منصوبہ برائے کمپیوٹرائزڈ ڈیمانڈ نوٹس میں واضح نقائص پائے گئے ہیں اور اربن یونٹ کی طرف سے تیار کی جانے والی ڈیمانڈ اور ایکسائز اینڈٹیکسیشن کے سٹاف کی طرف سے مینوئلی تیار کی جانے والے ٹیکس ڈیمانڈ میں واضح فرق پایا گیا ہے۔ جس پر ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈٹیکسیشن پنجاب کی طرف سے محکمے کے تمام ڈائریکٹروں کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ ایسی جائیدادیں جن کی تشخیص کمپیوٹرائزڈ اور ہاتھ سے بنی ڈیمانڈ میں الگ الگ پائی جاتی ہے۔ ایسی جائیدادوں کا ازخود معائنہ کریں ۔ اور دیکھیں کہ تشخیص میں فرق کیوں پایا جارہا ہے۔ اور اگر کمپیوٹرائزڈ ڈیمانڈ غلط ہے۔ تو اربن یونٹ کو آگاہ کیا جائے تاکہ جائزہ لیا جاسکے کہ کمپیوٹرائزڈ فارمولے میں غلطی کہاں پائی جارہی ہے۔محکمے کے تمام ڈائریکٹروں کوتنبیہ کی گئی ہے کہ اگر کسی ڈائریکٹر کی طرف سے جواب موصول نہیں ہوتا تو تصور کیا جائیگا کہ کمپیوٹرائزڈ ڈیمانڈ درست ہے۔ پراپرٹی ٹیکس

مزید : صفحہ آخر