بہار کا اغاز، سیر گاہوں میں بے پناہ رش، شناختی کارڈ کی شرط سے شہری پریشان

بہار کا اغاز، سیر گاہوں میں بے پناہ رش، شناختی کارڈ کی شرط سے شہری پریشان

  

لاہور( رپورٹ،افضل افتخار) بہار کی آمد کے ساتھ ہی لاہور کے پارکس میں شہریوں کا رش بڑھ گیا ، چھٹی والے دن شہری بڑی تعداد میں پارکوں میں امڈ آئے اورخاص طور پر بچوں نے میلہ جمالیا،دوسری جانب انتظامیہ کی جانب سے شناختی کارڈ کی شرط سے شہری پریشان نظر آئے، پارکوں میں مہنگائی کے ہاتھوں بھی عوام خوار،تفصیل کے مطابق بڑھتی گرمی کے باوجود اتوار کے روز لاہور کے مختلف پارکوں میں شہریوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی جن میں باغ جناح ، ریس کورس،شالا مار باغ او ر گلشن اقبال پارک شامل ہیں۔ پارکوں میں نوجوان، بوڑھوں، خواتین اور خاص طور پر بچوں کی بڑی تعداد شریک تھی جبکہ اس موقع پرپارکوں میں داخلے کیلئے سیکیورٹی کے نام پرسخت چیکنگ نے بڑی تعداد میں عوا م کی سیر کا مزا خراب کردیا اور کئی فیملیز کو مایوس واپس لوٹنا پڑا جس پر وہ انتظامیہ کے خلاف پھٹ پڑے ، رو زنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے عذرا اور ان کے شوہر عاصم نے کہا کہ ہم سیرکے لئے آئے تو سیکورٹی گارڈ نے گیٹ پر روک کر شناختی کارڈ دکھانے کو کہا ہمیں کیا پتہ تھا کہ کارڈ دکھاناہوگا ان کا رویہ درست نہیں عوا م کو تنگ کیا جارہا ہے ۔ عادل ،عمران،سرفراز اور سنی نے کہا کہ ہم سب دوست اکھٹے ہوکر سیر کیلئے آئے ہیں اور یہاں پر آکر شناختی کارڈ نہ ہونے کی وجہ سے ہم اندر نہیں جاسکے اور اب مایوس ہوکر گھر جارہے ہیں ایک ہی چھٹی کا دن ہوتا ہے جب ہم گھر سے نکلتے ہیں مگر ساری سیر کا مزا کرکرا ہوگیا سیکورٹی اپنی جگہ مگر لوگوں کو تنگ نہیں کرنا چاہیے ،چیکنگ کرکے اندر جانے دیناچاہیے۔ عمیر،سدرہ،تانیہ،شنیلہ اور ماہم نے کہا کہ یہاں پر کنٹین پر کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں اور بہت غیرمعیاری چیزیں فروخت ہورہی ہیں جن کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں پنجاب حکومت عوام کے لئے دعوے تو بہت کررہی ہے لیکن عملی طور پر کچھ نہیں کیاجارہا یہاں پر زیادہ تر غریب اور متوسط لوگ آتے ہیں اور وہ اتنی مہنگی چیزیں خریدنے کی سکت نہیں رکھتے اس جانب توجہ دینے کی ضرورت ہے شہر کو میٹرو بس اور ٹرین کے ساتھ ساتھ مہنگائی سے بھی نجات دلائی جائے تاکہ عوام سکھ کا سانس لیں۔ساجد،حامد،شرجیل او ر اسد نے کہا کہ پارکس میں پینے کا صاف پانی بھی نہیں ہے اور باتھ رومز بھی بہت گندے ہیں حکومت عوام کو کیا ریلیف دے رہی ہے ۔بابر،کاشف،علی اورمحمد احمد نے کہا کہ پنجاب کے حکمران غریبوں کیلئے بھی کام کرے اور سب سے پہلے ان پارکس کا رخ کرکے دیکھیں کہ یہاں پر عوام کو کیسے لوٹا جارہا ہے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے ہر ایک اپنی مرضی کی قیمت وصول کررہا ہے اورعوام کی مجبوری کا فائدہ اٹھایا جارہا ہے ہم لوگ یہاں پر اپنی پریشانیا ں کم کرنے کیلئے آتے ہیں مگر یہاں یر ہمیں مزید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے ہم لوگ اب کہاں جائیں چاہے ہمیں سکون مل سکے پارکس تو ہوتے ہی سکون کے لئے ہیں مگر یہاں پر ٹھیکیداروں نے ملی بھگت سے مہنگائی کا جو بازار گرم کیا ہوا ہے اس سے بہت پریشانی ہوتی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -