ملکی زر مبادلہ کے ذخائر تیز ی کے ساتھ کم ہو رہے ہیں،بلال شیرازی

ملکی زر مبادلہ کے ذخائر تیز ی کے ساتھ کم ہو رہے ہیں،بلال شیرازی

  

لاہور(جنرل رپورٹر)مسلم لیگ ق کے رہنما و مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا ہے کہ پاکستان کا توازن ادائیگی خسارہ تشویشناک حد تک بڑھنا ملک کیلئے نقصان دہ ہے 8ماہ کا تجارتی خسارہ 5ارب74کروڑ30لاکھ ڈالر جبکہ اشیاء و خدمات کی تجارت کا مجموعی خسارہ20ارب 26کروڑ ڈالر تک پہنچ چکا ہے پاکستان کے توازن ادائیگی کا خسارہ پر اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے تشویش کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملکی برآمدات میں تیزی سے کمی اور درآمدات میں اضافہ سے ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی ہورہی ہے اور حکومت غیر ملکی اداروں سے قرضوں کے بعد اب ملکی بینکوں سے بے دریغ قرضے حاصل کر رہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ہاؤس میں یوتھ ونگ کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا کہ آنے والا سال2018جو الیکشن کا سال بھی ہے اس کے ساتھ ساتھ غیر ملکی قرضوں کی ادائیگی کا سال بھی ہے نئی حکومت کیلئے قرضوں اور سود کی ادائیگی ایک پریشان کن مسئلہ ہوگی ۔انہوں نے کہا کہ قرضوں اور ان کے سود کی ادائیگی کیلئے عوام پر نت نئے ٹیکسوں کا بوجھ ڈالا جائے گا انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے اخراجات کو کنٹرول کرے اور مزید قرضوں سے اجتناب کرکے برآمدات میں اضافہ کیلئے اقدامات کرے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -