پیپلز پارٹی شفاف مردم شماری چاہتی ہے، سینیٹرسعید غنی

پیپلز پارٹی شفاف مردم شماری چاہتی ہے، سینیٹرسعید غنی

  

کراچی (سٹاف رپورٹر ) پاکستان پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن کے قائم مقام (بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

صدر سینیٹر سعید غنی نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی شفاف مردم شماری چاہتی ہے، اس لئے ہی عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا ہے، اگر مردم شماری کا عمل اسی طرح جاری رہا تو پھر ان کے نتائج کوئی بھی تسلیم نہیں کرے گا، نواز شریف ملک کے نہیں بلکہ صرف لاہور کے وزیراعظم ہے، بیرون ملک دوروں پر صرف ایک صوبے کے وزیراعلیٰ کو ساتھ لے جانا دوسروں صوبوں کو نظر انداز کرنے کے مترادف ہے، اس سے احساس محرومی بڑھے گا، لوگوں کی پیپلز پارٹی میں شمولیت چوہدری جیسے لوگوں کے منہ پر طمانچہ ہے، عوام الطاف حسین کو رد کرچکے، عرفان اللہ مروت سے کوئی اختلاف نہیں، ایم کیو ایم کو جب بھی مینڈیٹ ملا تو اس نے اس وقت اپنا وزیراعلیٰ کیوں نہیں بنایا؟ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو بلاول ہاؤس چورنگی سے کاروان جمہوریت نامی گاڑی کو روانہ کرنے اور مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں وکارکنان کی پیپلز پارٹی میں شمولیت کے موقع پر منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پاکستان پیپلزپارٹی کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے کاروان جمہوریت گاڑی اتوار کو کراچی سے گڑھی خدابخش کیلئے روانہ ہوگئی۔ کاروان جمہوریت گاڑی کا افتتاح پیپلزپارٹی کے سینیٹر سعید غنی اور دیگر نے کیا۔ بلاول ہاؤس چورنگی سے 4اپریل کو گڑھی خدابخش میں شہید ذوالفقارعلی بھٹو کی برسی کے موقع پر پارٹی کے شہدائے کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے پیپلزپارٹی کراچی ڈویزن کے قائم مقام صدر سینیٹر سعید غنی نے کاروان جمہوریت کے نام سے تیار کی گئی گاڑی کو روانہ کیا۔کاروان جمہوریت گاڑی کراچی سمیت سندھ کے مختلف اضلاع سے ہوتے ہوئے چار اپریل کو گڑھی خدابخش پہنچے گی ۔ س موقع پر بلاول ہاؤس میں منعقدہ پریس کانفرنس کے موقع پر مختلف سیاسی جماعتوں کے مقامی رہنماؤں نے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا۔ پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والوں میں ایم کیو ایم پاکستان،تحریک انصاف ،عوامی نیشنل پارٹی سمیت مختلف برادریوں سے تعلق رکھنے والے افراد شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف کو یہ مکمل حق حاصل ہے کہ وہ پارٹی کو منظم کرنے کیلئے دورے کرسکتے ہیں ۔نوازشریف پورے ملک نہیں صرف لاہور کے وزیر اعظم ہے ۔بیرون ملکوں کے دوروں پر صرف ایک صوبے کے وزیر اعلی کو ساتھ لے جانا باقی صوبوں کو نظر انداز کرنے کے مترادف ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کوٹہ سسٹم شہری لوگ کے حق کی ضمانت ہے اگر اس کو ختم کرایا گیا تو بہت نقصان ہوگا ۔ سعید غنی نے کہا کہ ایم کیو ایم نے جام صادق،ارباب رحیم اور لیاقت جتوئی کو سودے بازی کے تحت وزیراعلی منتخب کراکے اپنے مینڈیٹ کا خود قتل کیا تھا ۔ایم کیو ایم کو جب بھی مینڈیٹ ملا تو اس وقت انہوں نے اپنا وزیر اعلی کیوں نہیں بنایا ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -