پانامہ کیس کا فیصلہ جو بھی ہو دنیا بھر میں چور چور ہو گیا:چودھری پرویز الٰہی

پانامہ کیس کا فیصلہ جو بھی ہو دنیا بھر میں چور چور ہو گیا:چودھری پرویز الٰہی

  

ملتان (سٹی رپورٹر)سابق ڈپٹی وزیر اعظم پاکستان و پاکستان مسلم لیگ ق کے مرکزی رہنماء چوہدری پرویز الٰہی نے کہا ہے ہر شخص کی نظریں سپریم کورٹ کی طرف ہیں قوم سپریم کورٹ کی عزت اور وقار کے لئے دعا کر رہی ہے فیصلہ جو بھی آئے مگر جگہ جگہ یہ دونوں بھائی چور چور مشہورہو گئے ہیں، ملتان اور لاہورسمیت پاکستان کی عوام نے حکمرانوں کو دل سے نکال دیا ہے حکمران فوج کی مدد کے بغیر موٹو گینگ چھوٹو گینگ باہر نہیں نکال سکے یہ عوام کو کیا تحفظ فراہم کریں گے جنوبی پنجاب کی عوام کے دل مسلم ق کے ساتھ ڈھڑکتے ہیں اس خطے کی عوام موجود حکمرنوں کو معاف نہیں کرے گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز ملتان میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیااس موقع پر انہوں نے مزید کہاہے کہ ملک میں حکومت نام کی کوئی چیز نظر نہیں آتی ہے صرف اخباری اشتہارات میں حکومت کام کر رہی ہے پانامہ کی وجہ سے حکومت کی سانس اکھڑ چکی ہے ، شریف برادران ہرعلاقے اور گاؤں میں چور مشہور ہو گئے ہیں ، سب کوپتہ ہے اورنج لائن کے فنڈز میں بے ضابطگیاں ہیں جبکہ جنوبی پنجاب کے فنڈز لاہور میں خرچ کئے جارہے ہیں۔ پانامہ کا مسئلہ چھوڑا نہیں گیا بلکہ قدر ت کی طرف سے آیا ہے اور اللہ خود ان کو سنبھالیں گے۔ حکمرانوں کی کرپشن کے خلاف داد رسی کیلئے پوری قوم سپریم کورٹ کی طرف دیکھ رہی ہے۔ اللہ تعالیٰ کے بعد سپریم کورٹ کی عزت ہے اے اللہ سپریم کورٹ کی عزت بچا ہے ، جھوٹ بول کر ایک بھائی جنگلہ بس سروس کے ساتھ تصاویر بنوا رہا ہے۔میٹرو بس پر 28ارب روپے خرچ کئے گئے ہیں جبکہ ہسپتالوں میں دوائی اور سکولوں میں تعلیم نہیں ہے حکمرانوں نے 10ہزار سکول بیچ دیئے اور 10نیلامی پر لگا دیئے ہیں ، ہسپتالوں میں سہولیات ہی نہیں ہیں تو ہیلتھ کارڈ کا کیا فائدہ ہوگا۔ 1122کے جواب میں شہباز شریف نے موٹر سائیکلوں پر موبائل ہسپتال بنا دیئے ہیں۔ میرے دور اقتدار میں پہلی بار میٹرک تک کتابیں مفت دی گئی تھیں۔ حکمرانوں کو کاشتکاروں سے اللہ واسطہ کا بیر ہے اور یہ اپنی دشمنی نبھا رہے ہیں ان کو کاشتکار پسند نہیں ہیں دور اقتدار میں ہمیں کاشتکاروں کے بیج اور قرضوں کی فکر ہوتی تھی فصل پکنے کے بعد اس کی قیمت کی فکرہوتی ہے آج کاشتکار حکومتی پالیسیوں کے باعث شدید مسائل میں جکڑا ہوا ہے۔ پاکستان میں جب آلو اور ٹماٹر کی فصل تیار ہوتی ہے تو انڈیا سے امپورٹ شروع کروا دی جاتی ہے مودی انکا دوست ہے اور نواز شریف مودی کو نیک خواہشات کاپیغام بھیجتا ہے جبکہ مودی پاکستانی نہتے عوام پر گولیاں برسواتا ہے۔ ہم نے اپنے دور اقتدار میں سالانہ 10لاکھ نوکریاں دیں۔ امن و امان کی صورتحال بہتر ہو ئی ہے۔ فوج کے بغیر موٹو گینگ چھوٹو گینگ کو نہیں مار سکتا ہے اگر ہمارے دور میں 350چیک پوسٹیں بنانے دی جاتیں تو شائد فوج کونہ بلانا پڑتا ، سیلاب، دہشت گردی کیخلاف کاروائی اور میچ کرانے جیسے کام فوج کر رہی ہے تو حکمران کیا کر رہے ہیں۔ جھوٹے حکمرانوں کا نام چوروں کی گنز بک میں آنا چاہیے۔ ٹیل تک پانی پہنچانے کیلئے یہماری حکومت نے کھالے پختہ کئے اور یونین کونسل کی سطح پر لیز ر لیول فراہم کئے۔ 40چھوٹے ڈیم بنا کر بجلی کی پیداوار میں اضافہ کیا گیا۔ 100سے زائد گونگے بہرے بچوں کے ادارے بنائے گئے ، وکیلوں کو فری میڈیکل ایڈ فراہم کی۔ جو کام 55سالوں میں نہیں ہوئے ہم نے 5سال میں کر دیکھائے۔ انہوں نے کارکنوں سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا ہے کہ مستقبل سنوارنے نکلیں اور پارٹی کی تنظیم نو کریں اور ممبرسازی کا آغاز کریں اس بار غلطی ہوئی تو غریبوں کا پرسان حال کوئی نہ ہوگا۔ اس موقع پر چوہدری طارق گجر ، یاسمین ملک ، یاسمین خاکوانی، رانا محمد حفیظ ،مشتاق انصاری، راجہ معراج خالد، رانا طارق، طارق گرامانی ملک نواز، چوہدری عبدالمالک چھٹہ، جمشید بپی، اظہر خان، چوہدری احسان، چوہدری الطاف، شمیم اختر سمیت دیگر مسلم لیگ ق کے وررکز نے شرکت کی۔ پاکستان مسلم لیگ ق کے مرکزی جنرل سیکرٹری و ایم این اے طارق بشیر چیمہ نے کہا ہے کہ چوہدری پرویز الٰہی پہلے سیاستدان ہیں جنہوں نے جنوبی پنجاب کے علیحدہ صوبہ دینے کا وعدہ کیا تھا مسلم لیگ ن کی حکمران اسمبلیوں میں قراردادیں پیش کرکے خاموش ہو گئے تھے کہ پیپلز پارٹی نے جنوبی پنجاب کا صوبہ نہیں بنایا ،اب وفاق اور صوبوں دونوں میں مسلم لیگ ن کی حکومت ہے۔ حکمرانوں نے کاشتکاروں کو ذلیل کرنے کا ٹھیکہ لے رکھا ہے سابق صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت نے کہا ہے کہ حکومت کا بنیادی فرض یہ ہے کہ عوام کو صحت و تعلیم کی بنیادی سہولیات فراہم کرے۔ جس جگہ ہسپتالوں میں بستر اور دوائی نہ ہوں وہاں میٹرو پر اربوں لگا دینا دیوالیہ ذہن کی نشانی ہے۔ پرویز الٰہی کے دور میں 1122مریض کے رشتہ داروں سے پہلے اْس کے گھر پہنچتی تھی۔ انہوں نیمزید کہا ہے کہ ایک بچے پر چوری کا الزام ہے اور اْس کی ضمانت نہیں ہو رہی وزیراعظم پر اربوں روپے چوری کا الزام ہے لیکن اپنے عہدے پر قابض ہے ، حکمران ملک و قوم سے سرمایہ لوٹ رہے ہیں اور دنیا بھر میں شرمندگی کا باعث بن رہے ہیں۔ ہمارے وزاعظم اور وزیراعلیٰ دونوں چور ہیں۔ سابق ایم پی اے طارق گرمانی نے کہا ہے کہ مظفر گڑھ میں ترقیاتی کام صرف چوہدری پرویز الٰہی کید ور میں ہوئے اور عوام ان کے ساتھ قدم جما کر کھڑے ہیں۔ ملک مرید عباس بپی نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب کا محسن ا?پ کے پاس آیا ہے پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کا دور حکومت گزر چکا ہے اور چوہدری پرویز الٰہی کے پانچ سال بھی آپ کی نظر میں ہیں موازنہ کریں ، اس دور میں کوئی نواز شریف اور زرداری نہیں بننا چاہتا عوام صرف یہ چاہتی ہے کہ عزتیں محفوظ رہیں ، علاج معالجہ کیلئے سہولتیں میسر نہیں ہیں اور غریب لوگوں کے پاس شادی کے پیسے بھی نہیں ہیں۔ جب میٹرو بس پلوں پر سے گزرتی ہے مسافر اللہ اللہ کرتے ہیں عوام کو میٹرو کا فائدہ نہیں ہوا ہے جس کو ہونا تھا ہو گیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ اول -