کرک ،قیمتوں میں ہوشربا اضافہ

کرک ،قیمتوں میں ہوشربا اضافہ

  

کرک (بیورورپورٹ)مجسٹریسی نظام نہ ہونے کے سبب سبزیوں اور پھلوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگی ناجائز منافع خوروں کے وارے نیارے ہوگئے تبدیلی کے عالمبردار تماشہ دیکھنے تک محدود ہوگئے ۔تفصیلات کے مطابق جب سے مجسٹریسی نظام کا خاتمہ ہوا ہے آئے روز ناجائز منافع خور سبزی اور پھلوں کی مارکیٹ میں مصنوعی قلت پیدا کرکے عوام کا چمڑا اتارہے ہیں دو ہفتے قبل تک 40 روپے کلو فروخت ہونیوالے ٹماٹر 130 سے150 روپے فی کلوگرام ،اسی طرح بھنڈی 80 سے بڑھکر 120 روپے اور سبز مرچ 100 سے بڑھکر 160 روپے کلوتک پہنچ گئی جبکہ کینو 170 روپے درجن،خربوزہ120 اور سٹرابری400 روپے کلو کے حساب سے مارکیٹ میں دستیاب ہیں اور انتظامیہ کیجانب سے کوئی روک ٹوک نہ ہونے کی سبب ناجائز منافع خوروں کے وارے نیارے ہیں اورجیسا چاہے نرخ مقرر کرلیتے ہیں جبکہ غریب اورمتوسط طبقہ بھی دام سنتے ہی توبہ توبہ کرتے ہوئے مایوس لوٹتے ہیں

مزید :

پشاورصفحہ آخر -