پشاور سے مبینہ اغوا برطانوی نژاد پاکستانی خاتون بازیاب،ملزم گرفتار

پشاور سے مبینہ اغوا برطانوی نژاد پاکستانی خاتون بازیاب،ملزم گرفتار
پشاور سے مبینہ اغوا برطانوی نژاد پاکستانی خاتون بازیاب،ملزم گرفتار

  


پشاور( ویب ڈیسک ) پشاور پولیس نے عیسیٰ نعل بندی سے اغواہونےوالی برطانوی نژاد پاکستانی خاتون کو بحفاظت بازیاب کرالیا اورخاتون سے محبت کے دعویدارملزم کوگرفتار کرلیا ہے۔ بازیاب ہونے والی خاتون نے ابتدائی تفتیش کے دوران انکشاف کیا کہ اسے اغواءنہیں کیا گیا بلکہ وہ خود اپنی مرضی سے بلال کے ساتھ گئی تھی کیونکہ ان دونوں کے درمیان 17سال سے افیئر چلا آرہا تھا۔ بازیاب ہونے والی خاتون اور ملزم کو آج روز عدالت میں پیش کیا جائے گیا جہاں ان کا بیان ریکارڈ کیا جائے گا۔

ڈی ایس پی ہشت نگری پیر جوہر شاہ کے مطابق ہفتہ کی شب فہد حسین ولد چند حسین ساکن عیسیٰ نعل بندی نے رپورٹ درج کرتے ہوئے بتایا تھا کہ وہ برٹش نیشنیلٹی ہولڈر ہے اورچند روز قبل اپنی اہلیہ 34سالہ نازیہ شاہین کے ہمراہ اپنے بھائی کی شادی میں شرکت کےلئے عیسیٰ نعل بندی آیا ہوا تھا گزشتہ روز اس کی اہلیہ بیوٹی پارلرگئی تھی تاہم کئی گھنٹے گزرنے کے باوجود وہ واپس نہیں آئی جبکہ اس کا موبائل فون بھی بند آرہا ہے۔

”ہماری شادی کو 15سال ہوئے ہیں اور ہم 10بچے پیدا کر چکے ہیں کیونکہ میں نے اور میری بیوی نے فیصلہ کیا تھا کہ ۔۔۔۔“

ڈی ایس پی کے مطابق رپورٹ کے بعد انہوں نے سائنسی خطوط پر کارروائی کرتے ہوئے گنج کے رہائشی ملزم بلال ولد اقبال کو گرفتار کرکے اس کے مکان سے مغویہ نازیہ شاہین کو بازیاب کرلیا جس نے ابتدائی تفتیش کے دوران بتایا کہ اسے اغواءنہیں کیا گیا بلکہ اس کا بلال سے سال 2000سے افیئر چلا آرہا ہے جس کے ساتھ شادی کی غرض سے وہ گھر چھوڑ کر اس کے پاس آئی تھی۔ ڈی ایس پی نے بتایا کہ خاتون اور ملزم کو پولیس حراست میں رکھا گیا ہے جنہیں آج عدالت میں پیش کیا جائے گا تاکہ دونوں کا بیان ریکارڈ کرایاجاسکے۔

مزید : پشاور