پنجاب یونیورسٹی میں ایک بار پھر دو طلباء تنظیموں میں کشیدگی،3 طلباء کو پیپر دینے سے روک دیا گیا

پنجاب یونیورسٹی میں ایک بار پھر دو طلباء تنظیموں میں کشیدگی،3 طلباء کو پیپر ...
پنجاب یونیورسٹی میں ایک بار پھر دو طلباء تنظیموں میں کشیدگی،3 طلباء کو پیپر دینے سے روک دیا گیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پنجاب یونیورسٹی میں ایک بار پھر دو طلباء تنظیموں میں کشیدگی دیکھنے میں آئی ہے اور طلباء تنظیم کے ایک گروپ نے دوسری تنظیم کے کارکنوں کو پییرپ دینے سے روک دیا ہے۔ترجمان یونیورسٹی کیمطابق پنجاب یونیورسٹی شعبہ سوشیالوجی میں 2 طلبہ تنظیموں میں کشیدگی ہوئی اور 3طلباء سرمد،منیب اور فہد کو پیپر دینے سے روکا گیا ہے۔پولیس کی بھاری نفری کو طلب کرکے طلباء کو پیپر دیئے بغیر گھروں کو روانہ کردیا گیا ہے۔ڈاکٹر معین ظفر نے بتایا کہ کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کیلئے بچوں کو گھر واپس بھیجا گیا اور تینوں بچوں کے پیپر دوبارہ لئے جائیں گے۔یاد رہے کہ اس سے قبل بھی پنجاب یونیورسٹی میں دو طلباء تنظیموں کے درمیان جھگڑا ہوچکا ہے جس کے بعد یونیورسٹی میں کشیدگی برقرار ہے۔

”ہماری شادی کو 15سال ہوئے ہیں اور ہم 10بچے پیدا کر چکے ہیں کیونکہ میں نے اور میری بیوی نے فیصلہ کیا تھا کہ ۔۔۔۔“

مزید :

لاہور -