دعا ہے نواز شریف سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف تک صحت مند رہیں،طاہرالقادری

دعا ہے نواز شریف سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف تک صحت مند رہیں،طاہرالقادری

لاہور(نمائندہ خصوصی ) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ میں عدلیہ کے حوالے سے کوئی بات نہیں کرنا چاہتا۔عدلیہ کی بات عدلیہ کے اندر عدلیہ کے ساتھ(بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

ہوگی۔ پاکستان آمد پر علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیر پورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 17 جون 2014 کے بعد یہ پہلی غیر جانبدار جے آئی ٹی بنی ہے۔ جس نے نواز شریف سے سوال و جواب کیا ۔اس جے آئی ٹی نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا۔گولیوں کے نشانات کا فرانزک سروے کرایا۔اسلحہ اور استعمال ہونیوالی گولیوں کے متعلق سوال و جواب کیا۔پچھلی دونوں جے آئی ٹیز نے کسی زخمی کا بیان بھی قلمبند نہیں کیا ۔ہم مرد ہیں ڈٹ کر انصاف کی جنگ لڑی ،لڑ رہے ہیں،لڑتے رہینگے۔ سربراہ عوامی تحریک کا ائیر پورٹ پر ڈاکٹر حسن محی الدین قادری ،خرم نواز گنڈا پور،فیاض وڑائچ،جی ایم ملک،جواد حامدنے استقبال کیا۔عوامی تحریک کے سینکڑوں کارکنان جن میں خواتین کی بڑی تعداد بھی شامل تھی نے استقبال کیا اور پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں۔ ایک سوال کے جواب میں کہاکہ دعا ہے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف تک نواز شریف صحت مند رہیں۔سارے سوالات سابق حکمرانوں سے پہلی بار ہوئے ہیں اور انکے ہوش اڑے ہوئے ہیں۔ نئی جے آئی ٹی نے نواز شریف،شہباز شریف،رانا ثنا،ڈاکٹر توقیر شاہ سمیت ملوث بیورو کریٹس اور 150 کے قریب افسران کے بیانات قلمبندکئے ہیں۔ہمیں نہیں معلوم جے آئی ٹی اپنی تفتیش میں کیا لکھے گی ۔ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ وکلاء سے مشاورت کرونگا۔اس کے بعد اگلے ایک دو روز میں تفصیلی پریس کانفرنس ہو گی۔

طاہرالقادری

مزید : ملتان صفحہ آخر