کا لج اساتذہ کا پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنا ، مال روڈبلاک ، ٹریفک بلاک شہری خوار

کا لج اساتذہ کا پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنا ، مال روڈبلاک ، ٹریفک بلاک شہری ...

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پروموشن کیلئے پندرہ دن ٹریننگ کی شرط ناقابل قبول اور ریگولر کرنے کا مطالبہ لئے پنجاب بھر کے کالج اساتذہ کا پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنا، مال روڈ بلاک ہونے سے بدترین ٹریفک جام ہو گئی۔لاہور چیئرنگ کراس پر کالج اساتذہ نے مطالبات منوانے کیلئے احتجاج کا راستہ اپناتے ہوئے دھرنا دیدیا۔ اساتذہ نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینرز اٹھا کر حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔محکمہ ہائیر ایجوکیشن کی جانب سے اساتذہ کی 15روز ٹریننگ ضروری قرار دی تو سرکاری کالجز کے اساتذہ نے واضح کہ دیا کہ ہم ٹریننگ نہیں بلکہ احتجاج پالیسی اپنا سکتے ہیں۔اساتذہ نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں ترقی دی جائے، ایڈہاک اساتذہ کو مستقل کرے، پے پروٹیکشن اور سروس سٹرکچر بحال کیا جائے جبکہ حکومت خیبر پختونخوا طرز کا 5 درجاتی پروموشن فارمولہ کا اجرا بھی کرے۔اساتذہ کی جانب سے مال روڑ دھرنے کے باعث ٹریفک کا نظام شدید متاثر ہو کر رہ گیا۔ مال روڑ اور اس سے منسلک اہم شاہراہوں پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں جس پر شہریوں کی جانب سے شدید غم و غصے کا بھی اظہار کیا گیا۔

اساتذہ احتجاج

مزید : صفحہ اول