کرونا قدرتی آفت‘ احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ضروری ہے‘ مولانا حنیف جالندھری

کرونا قدرتی آفت‘ احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ضروری ہے‘ مولانا حنیف ...

  



ملتان (سٹی رپورٹر) وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے ناظم اعلیٰ ا ور جامعہ خیر المدارس ملتان کے مہتمم و شیخ الحدیث مولانا محمد حنیف جالندھری نے کرونا وائرس سے پیدا شدہ صورت حال پر اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس وقت پوری دنیا کرو نا وائرس کی لپیٹ میں ہے بڑے بڑے ترقی یافتہ ممالک اس سماوی آفت کے سامنے بے بس ہیں اور اس بات کے منتظر(بقیہ نمبر28صفحہ12پر)

اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالی ہی اس مُہلک وبا سے انسانیت کو نجات عطا فرمائیں۔ اس سلسلہ میں تمام احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ضروری اور شریعت مطہرہ کا حکم ہے بلاشبہ انسان اپنی ان تدابیر کے ذریعے تقدیر سے نہیں بھاگ سکتا لیکن ہمیں بحیثیت مسلمان حکم دیا گیا ہے کہ ہم اللہ تعالی پر پورے بھروسے اور توکل کے ساتھ ساتھ حفاظتی تدابیر بھی اختیار کریں اسی سلسلہ میں ایک تجویز سامنے آئی ہے کہ مساجد سے قالین اٹھادئیے جائیں کیونکہ یہ قالین جراثیموں کی کی آماجگاہ بن سکتے ہیں اور یہ بھی ہوسکتا ہے کہ کسی متاثرہ شخص نے ان پر ہاتھ لگایا ہو یاسجدہ کیا ہو اگر کسی جگہ قالینوں کا اٹھانا مشکل ہو تو میری گزارش یہ ہے کہ ہر نمازی اپنے گھر سے کوئی صاف کپڑا یا جائے نماز ساتھ لائے اور قالین /صفوں یا فرش کے اوپر بچھا کر اس پر نماز ادا کرے تاکہ حفظ ماتقدم ہوسکے اور کسی قسم کا اندیشہ نہ رہے۔انہوں نے کہا کہ بحمداللہ ڈاکٹرز نرسز اور پیرا میڈیکل اسٹاف نہایت جانفشانی سے مریضوں کی خدمت کر رہے ہیں اللہ تعالی ان کو اس کی بہترین جزا عطا فرمائیں لیکن چونک کرونا وائرس کے مریض کو آئسولیٹ کر دیا جاتا ہے اور لوگ اس کے قریب جانے سے گھبراتے ہیں اس لئے بعض مقامات پر مریضوں کے تنہائی محسوس کرنے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ ڈاکٹرز نرسز اور پیرامیڈیکل سٹاف سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس خدمت کو عبادت سمجھ کر انجام دیں اور اپنی تمام احتیاطی اور حفاظتی تدابیر کے ساتھ مریض کو یہ احساس نہ ہونے دیں کہ اس کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ بالخصوص سرکاری ہسپتالوں میں متعلقہ افراد کو پوری تندہی سے اپنے فرائض انجام دینے چاہیں، اللہ تعالیٰ ابتلاء کے اس موقع پر انہیں اس خدمت کا دنیا اور آخرت میں اجر عظیم عطا فرمائیں گے۔

حنیف جالندھری

مزید : ملتان صفحہ آخر