آٹے کا سٹاک وافرمقدار میں موجود‘ ذخیر اندوزوں کیخلاف ہوگی‘ شان الحق

آٹے کا سٹاک وافرمقدار میں موجود‘ ذخیر اندوزوں کیخلاف ہوگی‘ شان الحق

  



ملتان (کورٹ رپورٹر) کمشنر ملتان ڈویثرن شان الحق نے کرونا وبا کو کنٹرول کرنے کی انتظامی کاوشوں بارے کہا کہ تمام حکومتی مشینری جنگی بنیادوں پر اقدامات کررہی ہے۔ شہری گھروں میں رہیں اور انتظامیہ کا ساتھ دیں۔ابتدائی دنوں میں شہریوں کو آگاہی دی گئی اور نرمی برتی گئی لیکن اب ناکہ بندی کرنے کا باقاعدہ آغاز کیا جارہا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ(بقیہ نمبر29صفحہ12پر)

کرونا کی وبا پہلی بار دنیا میں رونما ہوئی۔دوسرے ملکوں کے حالات سے ہمیں سبق سیکھنا چاہییے۔جن ملکوں نے احتیاط نہیں کی وہاں نقصان زیادہ ہوا۔ ہمیں بھی ذمہ دار قوم ہونے کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ آٹا کا سٹاک ڈویڑن بھر میں وافر مقدار میں موجود ہے جبکہ سیل پوائنٹس قائم کر دیئے گئے ہیں۔متعلقہ ڈپٹی کمشنرز آٹے اور اشیاء خوردونوش کی فراہمی یقینی بنانے کے عمل کو خود مانیٹر کر رہے ہیں۔کمشنر شان الحق نے کہا کہ ذخیرہ اندوزوں، گراں فروشوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے۔ قومی ذمہ داری کا احساس کرتے ہوئے ایسے عناصر کو ان حرکتوں سے باز رہنا چاہیے۔ وطن عزیز کی بقا اور شہریوں کی سلامتی ہماری اولین ترجیح ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ جلد مارکیٹ میں اچھے ہینڈ سینٹائزرز اور ماسک دستیاب ہونگے۔ کرونا وائرس کیس بارے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملتان ڈویڑن میں کوئی ڈومیسٹک کیس پازیٹو نہیں آیا۔ جبکہ ڈویڑن بھر میں آئسولیشن وارڈز بنا دئے گئے ہیں۔ شہریوں کی سہولت کیلئے نشتر میں ٹیلی میڈیسن کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ کمشنر نے کہا کہ قرنطینہ کے قیام میں ڈپٹی کمشنر عامر خٹک ستائش کے مستحق ہیں، ضلعی انتظامیہ قرنطینہ میں اور شہر میں بھی پورے طریقے سے سرگرم ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ قرنطینہ کے سیورج کا شہر کی سیورج سے کوئی کنکشن نہیں۔ قرنطینہ کا ویسٹ بھی سائنسی بنیادوں پر تلف کیا جارہا ہے اس لئے عوام کسی منفی پراپیگنڈے پر کان نہ دھریں۔شہر کے مختلف مقامات پر دیہاڑی دار افراد کیلئے راشن پوائنٹس قائم کر دیئے گئے ہیں۔کمشنر شان الحق نے مزید کہا کہ ڈاکٹرز، پیرامیڈیکل سٹاف، انتظامی افسران، میٹروپولیٹن کارپوریشن کے افسران و اہلکار، سول ڈیفنس، ویسٹ مینجمنٹ کمپنی،واسا کا عملہ، اور ہر وہ شخص جو قرنطینہ میں، ہسپتالوں میں عوامی خدمت کر رہا ہے،لائق تحسین ہے۔

شان الحق

مزید : ملتان صفحہ آخر